جمعرات 29ستمبر 2011ء
پشاور ( پ ر ) پختون سٹوڈنٹس فیڈریشن کے زیر اہتما م سانحہ جہانزیب کالج سوات کے
شہداءہاشم خان اور موسیٰ خان کی یاد میں تعزیتی ریفرنس باچا خانؒ مرکز پشاور میں
زیر صدارت پختون ایس ایف کے صوبائی صدر ماجد خان و جنرل سیکرٹری ریاض خان مروت
منعقد ہو ا جس میں صوبائی وزیر اطلاعات میاں افتخار حسین ‘ اے این پی کے صوبائی
جنرل سیکرٹری تاج الدین خان ‘ پختون ایس ایف کے ایڈوائزر و اے این پی کے صوبائی
سیکرٹری اطلاعات ارباب محمد طاہرخان خلیل ‘ پختون ایس ایف کے مرکزی صدر بشیر شیر پاﺅ
‘ صوبائی کابینہ ‘ ڈویژنل صدور و جنرل سیکرٹریز ‘ ضلعی ‘ کیمپس ‘ مختلف یونیورسٹیوں
اور صوبے بھر کے کالجوں سے پختون ایس ایف کے یونٹ صدور و جنرل سیکرٹری نے شرکت کی ‘
اس موقع پر شہداءکے بلندی ¿ درجات کے لئے فاتحہ خوانی بھی کی گئی ‘ اور ایک متفقہ
قرارد اد منظور کی گئی جس میں مطالبہ کیا گیا تھا کہ سانحہ جہانزیب کالج میں ملوث
انصاف سٹوڈنٹس فیڈریشن کے ارکان کو گرفتار کرکے قرار واقعی سز ا دی جائے تاکہ آئندہ
کسی کو تعلیمی اداروں کا تقدس پامال کرنے اور بے گناہ طلباءکا خون بہانے کی جرا ¿ ت
نہ ہوسکے قرارداد میں مزید کہا گیا کہ انصاف سٹوڈنٹس سے تعلق رکھنے والے ایک ملزم
کو ماضی میں شدت پسندوں کے ساتھ روابط کے باعث گرفتار بھی کیا گیا تھا لیکن عدالت
نے اسے رہا کردیا ‘جس کے بعد اس نے یہ بہیمانہ کارروائی کی ‘تعزیتی ریفرنس سے خطاب
کرتے ہوئے صوبائی وزیر اطلاعات میاں افتخار حسین نے کہا کہ ہاشم خان شہید اور موسیٰ
خان شہید کے قاتلوں کو گرفتار کرکے قرار واقعی سزا دلائی جائے گی ‘ باچا خانؒ کے
فلسفہ عدم تشدد کی پیروی کو کمزوری نہ سمجھا جائے ‘ انہوں نے کہا کہ ہم حالات کا ڈٹ
کا مقابلہ کر رہے ہیں اور مستقبل میں بھی اپنی اصولی جدوجہد جاری رکھیں گے پختون آج
اپنی بقاءکی جنگ لڑ رہے ہیں ‘ دہشت گرد چاہے دنیا کے کسی کونے میں بھی ہوں ان کے
خلاف عملی کارروائی کرنا ہوگی ‘ انہوں نے کہا کہ افغانستان اور پاکستان کا امن ایک
دوسرے سے مشروط ہے ‘ ہماری پالیسیوں کی بدولت دہشت گرد بے نقاب ہوگئے ہیں اور کل جو
لوگ انہیں چندے دیتے تھے وہی آج ان سے نفرت کرتے ہیں ‘ انہوں نے کہاکہ ہمارے
شہداءپختونوں کی تاریخ میں ہمیشہ زندہ رہیں گے ‘ تعزیتی ریفرنس سے خطاب کرتے ہوئے
پختون ایس ایف کے ایڈوائزر ارباب محمد طاہر خان خلیل نے کہا کہ تعلیمی اداروں میں
پرامن ماحول پختون ایس ایف کا مطم ¿ح نظر ہے اور تنظیم طلباءکے حقوق اور انہیں عصر
حاضر کے مطابق تعلیمی اور دیگر سہولیات دلانا کے لئے مصروف عمل ہے ‘ انہوں نے کہا
کہ بعض تعلیم دشمن عناصر کی جانب سے پر امن تعلیمی ماحول کو خراب کرنے کےلئے گاہے
بگاہے پختون ایس ایف کے عہدیداروں اورکارکنوں کو چن چن کر موت کے گھاٹ اتارا گیا ‘
مگر فخر افغان باچاخانؒ کے فلسفہ عدم تشدد کی علمبردار ہونے کے ناطے ہم کبھی بھی
تشدد کا جواب تشدد سے نہیں دیا بلکہ عدم تشدد کے ہتھیار سے اپنے مخالفین کو زیر کیا
‘ تعزیتی ریفرنس سے عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی جنرل سیکرٹری تاج الدین خان ‘
پختون ایس ایف کے مرکزی صدر بشیر شیر پاﺅ اور صوبائی صدر ماجد خان نے بھی خطاب کیا
۔
جاری کردہ
مرکزی میڈیاسیل
باچا خان ؒ مرکز پشاور