مورخہ 02 جنوری 2010
پریس ریلیز

پشاور (پ ر) آج باچا خان مرکز پشاور میں اے این پی صوبہ پختون خوا کے تمام ضلعی
سیکرٹریز اطلاعات کا ایک اجلاس صوبائی سیکرٹری اطلاعات ارباب محمد طاہر خان خلیل کے
زیر صدارت منعقد ہوا۔ ضلعی سیکرٹریز اطلاعات کے علاوہ صوبائی جنرل سیکرٹری تاج
الدین خان اور معروف صحافی بہروز خان نے پارٹی میں سیکرٹری اطلاعات کی ذمہ داریوں
پر تفصیلی روشنی ڈالی اور کہا کہ پارٹی میں ضلعی سیکرٹری اطلاعات پارٹی کی زبان
ہوتی ہے اور پارٹی اپنا پیغام عوام تک اس کے ذرےعے پہنچاتی ہے۔ اجلاس میں صوبائی
سیکرٹری اطلاعات نے مختلف تجاویز پیش کی اور اس طرح کے اجلاسوں کو خوش آئند قرار
دیا۔
اجلاس سے صوبائی سیکرٹری اطلاعات ارباب محمد طاہر خان خلیل اور صوبائی جنرل سیکرٹری
تاج الدین خان نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ آج جمہوری دور میں میڈیا آزاد ہے اور ہر
کسی کو اپنا نقطہ نظر پیش کرنے کی مکمل آزادی حاصل ہے جو جمہوریت کا حسن ہے۔ اُنہوں
نے سیکرٹریز اطلاعات پر زور دیا کہ دہشت گردوں کے خلاف جنگ کو کامیابی سے ہمکنار
کرنے کےلئے اپنابھرپور کردار ادا کرے اُنہوں نے کہا کہ موجودہ بحران اور دہشت گردی
سابقہ حکومتوں سے موجودہ جمہوری حکومت کو ورثے میں ملی ہے اُنہوں نے کہا کہ آمروں
نے آمریت کےلئے ملکی آئین میں جو ترامیم کی تھی جمہوری حکومت نے اس کو آئینی پیکج
کے ذرےعے ختم کر کے 73ءآئین کو اپنی اصل روح کے مطابق بنایا ہے جو جمہوریت کی
کامیابی ہے۔
اُنہوں نے کہا کہ جمہوری حکومت نے 19 سال بعد ملک کو متفقہ NFC ایوارڈ سے نوازا جس
میں صوبوں کا حصہ بڑھا کر کافی حد تک ان کی احساس محرومی کا ازالہ کیا گیا ہے اور
پہلی بار مرکز نے اپنا حصہ کم کیا ہے جو صوبائی خود مختاری کی طرف ایک اہم قدم ہے
جو ہمارے منشور کا حصہ ہے۔ اُنہوں نے کہا کہ فخر افغان باچا خان کے پیروکار اپنے
حکومت پانچ سال پورے کریں گے اور وہ پانچ سال کے دورانےے میں قوم کے مسائل ایک ایک
کر کے حل کرے گی اور اپنی کارکردگی کی بنیاد پر قوم کا سامنا کرے گی۔
جاری کردہ

ارباب محمد طاہر خان خلیل
صوبائی سیکرٹری اطلاعات اے این پی
پختون خوا