مورخہ 18 اکتوبر 2010ء بروز پیر
پریس ریلیز

پشاور (پ ر) عوامی نیشنل پارٹی کے مرکزی سیکرٹری اطلاعات سینیٹر زاہد خان نے آج
گزشتہ روز کراچی میں ضمنی الیکشن کے موقع پر ایم کیو ایم کے تشدد آمیز سیاست کی وجہ
سے سندھی اور پختونوں کے خون ناحق کرنے پر شدید ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ
اے این پی اس واقعے کی پرزور الفاظ میں مذمت کرتی ہے۔
اُنہوں نے باچا خان مرکز پشاور سے اپنے جاری کردہ بیان میں کہا ہے کہ اے این پی
سندھ نے کراچی میں ماضی کی طرح ٹھپہ الیکشن کے روک تھام کےلئے جو تجاویز دی تھیں
اگر ان پر عمل کیا جاتا تو آج کراچی میں آزادانہ ماحول میں ضمنی الیکشن ہوتے اور
ایسے حالات دیکھنا نہیں پڑتے لیکن بدقسمتی سے ہماری تجاویز کو رد کر دئےے گئے تو اے
این پی کے پاس ٹھپہ الیکشن کے بائیکاٹ کے سوا کوئی دوسرا راستہ نہیں تھا۔ سینیٹر
زاہد خان نے کہا ہے کہ جب سے کراچی میں ایم کیو ایم کا وجود عمل میں آیا ہے تو
کراچی میں خونریزی اور قتل و غارت گری کا ایک نہ ختم ہونےوالا سلسلہ شروع ہو گیا ہے۔
اُنہوں نے کہا کہ اے این پی سینیٹ میں کراچی کے واقعات کے خلاف تحریک استحقاق جمع
کرائے گی۔
سینیٹر زاہد خان نے کہا کہ ہم باچا خان کے عدم تشدد کے پیروکار ہے اورکسی قسم کے
تشدد پر یقین نہیں رکھتے ہیں اور میڈیا سے اپیل کی کہ ان واقعات میں غیر جانبدارانہ
کردار ادا کرتے ہوئے قوم کو اصل صورتحال سے آگاہ کرے۔

جاری کردہ

زاہد خان
مرکزی سیکرٹری اطلاعات
عوامی نیشنل پارٹی