مورخہ 11 اکتوبر 2010ءبروز پیر
پریس ریلیز

عوامی نیشنل پارٹی صوبہ خیبر پختونخوا کی کابینہ کا خصوصی اجلاس زیر صدارت صوبائی
صدر افراسیاب خٹک منعقد ہو ا جس میں مرکزی کابینہ کے ارکان سینیٹر حاجی محمد عدیل ،سینیٹر
زاہدخان،رکن قومی اسمبلی و مرکزی نائب صدر بشریٰ گوہر ،ایم این اے جمیلہ گیلانی اور
ظاہر شاہ آف اوچ نے خصوصی دعوت پر شرکت کی ،اس موقع پر ملکی سیاسی صورتحال ،سیلاب
کی تباہ کاریوں اور تعمیر نو ،دہشت گردی وٹارگٹ کلنگ اور صوبے میں تنظیمی صورت حال
پر تفصیلی غور و خوض کیا گیا ‘اجلاس میں حکومت کی کارکردگی اور پارٹی کے تنظیمی
امور کا تفصیلی جائزہ لیا گیا ،اور چند اہم فیصلے کئے گئے ،اس موقع پر صوبے میں
سیلاب کی تباہ کاریوں اور مرکزی حکومت سے تعمیر نو کےلئے مطلوب فنڈز اور صوبے کی
ضروریات پر بھی تبادلہ خیال کیا گیا ‘اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے صوبائی صدر افراسیاب
خٹک نے کہا کہ 3سالہ دور میں آمریت کے پیدا کردہ مسائل کو حل کرکے اور 18ویں ترمیم
کے ذریعے پارلیمنٹ کو بااختیار بنا کر ہمیشہ کےلئے آمریت کا راستہ روک دیا ہے،
انہوں نے کہا کہ پارٹی نے جمہوریت اور دہشت گردی کےخلاف جنگ میں 450رہنما اور کارکن
شہید ہوئے ،مگر ان شہداءکا خون رائیگاں نہیں گیا اور آ ج پختون قوم کو شناخت مل چکی
ہے ‘اور خیبر پختونخوا پارٹی کی دیرینہ آئینی و پارلیمانی جدوجہد کا نتیجہ ہے ،اس
موقع پر ایک متفقہ قرار داد بھی منظور کی گئی جس میں وفاقی حکومت سے مطالبہ کیا گیا
کہ خیبر پختونخوا اور بلوچستان کو نظر انداز کرنے کی پالیسی ترک کرکے وفاق کے دو
تہائی اہم یونٹوں کو اقتدار میں جائز حصہ دیا جائے ،قرارداد میں اس امر کی بھی
نشاندہی کی گئی کہ ریاست کے اعلیٰ عہدوں بشمول صدر مملکت ‘وزیر اعظم ،سپیکر قومی
اسمبلی ‘چیئر مین سینٹ ،مسلح افواج کے سربراہان ،وفاقی کارپوریشنوں کے چیئرمینز ،وفاقی
کابینہ میں دفاع ،خزانہ ،تعلیم اور پلاننگ کمیشن میں خیبر پختونخوا اور بلوچستان کا
کوئی بھی باشندہ نظر نہیں آتا، قرارداد میں مزید کہا گیا اگر چہ یہ کوئی آئینی ذمہ
داری نہیں اور صرف مضبوط سیاسی و جمہوری حکومتوں میں ہی وفاق کے تمام یونٹوں کو
مساوی نمائندگی دینا روایات کا حصہ ہو تا ہے جو کہ وطن عزیز میں پے درپے فوجی
آمریتوں کی وجہ سے پنپ نہیں سکیں مگر پھر بھی چھوٹے صوبوں کو وفاق سے بڑی امیدیں
وابستہ ہیں ‘قرارداد میں یہ امید بھی ظاہر کی گئی کہ وفاقی حکومت خیبر پختونخوا اور
بلوچستان جیسے اہم یونٹوں کے احساس محرومی کے خاتمے کےلئے اعلیٰ ریاستی اور حکومتی
عہدوں کی تقسیم میں موجودہ عدم توازن ختم کرنے کےلئے مناسب اقدامات کرے گی ۔

جاری کردہ

ارباب محمد طاہر خان خلیل
صوبائی ترجمان عوامی نیشنل پارٹی