مورخہ 06 نومبر 2010ء
پریس ریلیز

پشاور (پ ر) عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی نائب صدر اور خاتون ایم پی اے و پبلک
سیفٹی کمیشن کی چیئر پرسن شگفتہ ملک نے گزشتہ روز وومن پولیس اسٹیشن پشاور کا دورہ
کیا اور وہاں پر وومن پولیس اسٹیشن کے انچارج سے ملاقات کر کے تمام ریکارڈ چیک کیا
تو وہاں پر اس بات کا پتہ چلا کہ وومن پولیس اسٹیشن جو 1994ءمیں قائم ہوا ہے اس میں
کسی قسم کی ایف آئی آر درج نہیں ہوا تھا۔
اس موقع پر شگفتہ ملک نے کہا کہ خواتین کے حقوق کا مکمل تحفظ کیا جائےگا اور معاشرے
میں ان کے ساتھ زیادتیوں اور تشدد کا سخت نوٹس لیکر حکومت خواتین کی تحفظ اور حقوق
کےلئے مو ¿ثر اقدامات اُٹھائیگی اور انشاءاللہ خواتین کے تمام مسائل اور ان کی
مشکلات ترجیحی بنیادوں پر حل کی جائےگی۔
اُنہوں نے خواتین سے اپیل کی کہ اپنے ساتھ ہونےوالے زیادتیوں اور نا انصافیوں کے
خلاف شکایات اور ایف آئی آرز خواتین پولیس اسٹیشن میں درج کیا کریں تاکہ بہتر انداز
میں آپ کی داد رسی‘ معاشرے میں ہونےوالے زیادتیوں اور ناانصافیوں کا ازالہ ہو سکے
اور وہ عناصر جو خواتین کے ساتھ زیادتیوں اور ناانصافیوں میں ملوث قرار پائے جائے
ان کو انصاف کے کٹہرے میں لا کر قرار واقعی سزا دیکر انصاف کے تقاضوں کو پورا کیا
جا سکے۔

جاری کردہ

شگفتہ ملک ایم پی اے
صوبائی نائب صدر اے این پی
خیبر پختون خوا