مورخہ 11 جنوری 2010
پریس ریلیز

پشاور (پ ر) آج باچا خان مرکز پشاور میں زیر صدارت ارباب الطاف قادر اُولڈ پختون
ایس ایف کے ارکان کا ایک خصوصی اجلاس منعقد ہوا۔ جس میں سابق پختون ایس ایف سے تعلق
رکھنے والے ممبران نے کثیر تعداد میں شرکت کی۔اجلاس میں ارکان اسمبلی‘ ڈاکٹرز‘
وکلائ‘ اعلیٰ سرکاری ملازمین‘ سیاسی کارکن اور پارٹی عہدیدار نے شرکت کی۔ ارکان نے
ملکی سیاسی صورت حال اور موجودہ فورم کو مزید فعال بنانے کےلئے مختلف تجاویز پیش کی
جن کو جلد عملی جامہ پہنایا جائےگا۔
اس موقع پر فورم کے سرپرست اور صوبائی وزیر اطلاعات میاں افتخار حسین‘ پارٹی کے
صوبائی سیکرٹری اطلاعات ارباب محمد طاہر‘ کمیٹی کے رکن بہروز خان اور دوسرے ارکان
نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ہم نے ہمیشہ پختون وطن کی آبادی اور اُن کے روشن مستقبل
کےلئے عملی جدوجہد کی ہے اور آئندہ بھی اسی جذبہ کے تحت کام کرتے رہیں گے آج ہم جس
دور سے گزر رہے ہیں وقت کا تقاضا ہے کہ ہم متحد ہو کر حالات کا مقابلہ کرے۔ اجلاس
میں سرپرست اعلیٰ کےلئے میاں افتخار حسین‘ صدر ارباب الطاف قادر اور سیکرٹری کےلئے
عبداللہ یوسفزئی کا متفقہ طور پر انتخاب عمل میں لایا گیا۔ اجلاس میں متفقہ طور پر
مختلف قراردادیں منظور کئے گئے جن میں قرار داد (1) پارٹی نے دہشت گردی کے خلاف جو
مو ¿قف اختیار کیا ہے ہم اس کی مکمل تائید کرتے ہیں کیونکہ یہ پمارا وطن ہے اور
اپنے وطن کی حفاظت بھی ہم کریں گے چاہے اس کےلئے ہمیں جو قربانی دینی پڑے۔ آج ہمارا
معاشرہ دو حصوں میں تقسیم ہو چکا ہے ایک طرف دہشت گرد اور ان کے حمایت یافتہ گان ہے
اور دوسری طرف امن پسند‘ ہم قوم سے اپیل کرتے ہیں کہ دہشت گردوں کے خلاف متحد ہو کر
امن پسند قوتوں سے مل کر حالات کا مقابلہ کرے۔ قرارداد (2)ملک میں مرکزی اور صوبائی
حکومتوں نے جمہوریت اور جمہوری اداروں کے استحکام‘ NFC ایوارڈ کی 19 سال بعد متفقہ
انعقاد‘ صوبے کو بجلی کا خالص منافع 110 ارب روپے کا حصول اور صوبائی حقوق کے حصول
کےلئے جدوجہد کی مکمل حمایت کرتے ہیں شامل ہیں۔

جاری کردہ

عبداللہ یوسف زئی
سیکرٹری اُولڈ پختون ایس ایف