Chief Minister Khyber Pakhtunkhwa Amir Haider Khan Hoti has said that assailant who attacked Malala Yousafzai were enemy to knowledge, light and development and pushing the Pakhtun nation into darkness of illiteracy for realizing their evil designs. He said that their dreams will never materialized and nations having such brave daughters can’t be defeated. He said that terrorists, enemies to religion and humanity will be fought courageously. He said that ANP moved for forward from other parties due to its political and people service program. He said that destinies of people of far flung areas were changing due to indiscriminate development works across the province. 

He was addressing a huge people gathering at residence of Haji Sarfaraz Khan of Hathian Mardan on Wednesday. President ANP District Mardan, Haji Farooq Akram Khan presided the public meeting. The CM announced package of Rs.530 million for PK-27 constituency. President Malgari Wakelan Tehsil Bhai, Riaz Ali Khattak, Haji Abdul Aleem Khan, ANP General Secretary Imran Mandori, Former MPA Haji Bahadir Khan of Hathian and Amir Khan Khattak also addressed the gathering.
Earlier the CM laid foundation stones of Hathian-Sakhakot Road (7 Km), Jala-Umar Abad Road (4.5 Km) and bridges at Kodrai and Safiabad that will jointly cost Rs. 290 million. The CM said that Mardan was intentially deprived of fruits of development during the past 60 years. He said that now its high times to give each area its just right and demands of justice be fulfilled. He said that net of development and construction activities has been extended across the province and has proved propaganda of opponents wrong by realizing promise of Khpala Khwara Khpal Ikhtyar. He said that the era of empty exchequer was over now. He said that his association to this constituency was not that of voter or member but we were bonded in strong relation of red flag and Pakhtun Wali which was more important to the rest. He said that people problems were solving at their door step due to Abdul Wali Khan University, Bacha Khan Medical College, Eastern and Western By-passes, ring road numerous link roads and others development schemes. He said that we were not practicing politics of slogans and promises rather we believed in practical politics. He announced new girls Degree College for PK-27 constituency that will cost Rs. 220 million and issued directives for selection of suitable location for the college.
The chief minister said that designs of pushing the nation in darknesses of illiteracy will be thwarted and the establishment of new schools and colleges for girls was testimony of our this commitment. He announced Rs. 30 million for construction of mosques and Madrassa, up-gradation of schools and funeral place in Hathian. Haji Sarfaraz Khan of Hathian announced provision of land free of cost for funeral place. The chief minister said that we don’t practice politics on mosques and Madrassa rather we built these purely for pleasing Allah. He prayed Allah for giving opportunity into power that serve the people in real sense and who not shun sacrifice of life in time of need. Thousands of people in the gathering offered dua for Malala, the knowledge and peace icon, on appeal of the chief minister. Earlier workers of people’s party, PTI and other political parties announced association to ANP on the occasion. The chief minister congratulated them and offered red caps.
The chief minister also inquired the health of ANP senior leader Khalid Khan at his residence. He expressed his well wishes for his health and long life.
خیبرپختونخوا کے وزیر اعلیٰ امیرحیدر خان ہوتی نے کہا ہے کہ ملالہ یوسف زئی پر قاتلانہ حملہ کرنے والے علم، روشنی، ترقی اور آبادی کے دشمن ہیں جو پختون قوم کو جہالت کے اندھیروں میں دھکیل کراپنے مذموم مقاصد کی تکمیل چاہتے ہیں لیکن اُن کا یہ خواب کبھی شرمندہ تعبیر نہیں ہو گا جس قوم کی بیٹیاں اس قدر بہادر ہوں اُسے کوئی بھی شکست نہیں دے سکتا ۔ اسلام اور انسانیت سے عاری دہشت گردوں کا ڈٹ کر مقابلہ کریں گے۔ اے این پی اپنے سیاسی اور عوامی خدمت کے پروگرام کے باعث تمام سیاسی جماعتوں سے آگے نکل چکی ہے پورے صوبے میں بلاامتیاز جاری ترقیاتی کاموں سے دور دراز اور پسماندہ علاقوں کے عوام کی تقدیریں بدل رہی ہیں۔وہ بدھ کے روز مردان کے علاقے ہاتھیان میں حاجی سرفراز خان کی اقامت گاہ پر ایک بڑے عوامی اجتماعی سے خطاب کر رہے تھے جس کی صدارت اے این پی ضلع مردان کے صدر حاجی فاروق اکرم خان نے کی۔ وزیر اعلیٰ نے صوبائی حلقے پی کے۔27 کے لئے 53 کروڑ روپے کے ترقیاتی پیکج کا بھی اعلان کیا۔اجتماع سے ممتاز قانون دان اور ملگری وکیلان تحصیل تخت بھائی کے صدر ریاض علی خٹک، حاجی عبد العلیم خان، اے این پی کے جنرل سیکرٹری عمران ماندوری، سابق ایم پی اے حاجی بہادر خان آف ہاتھیان اور امیر خان خٹک نے بھی خطاب کیا۔قبل ازیں وزیر اعلیٰ نے 7 کلومیٹر طویل ہاتھیان سخا کوٹ روڈ، ساڑھے 4 کلومیٹر طویل جلالہ عمر آباد روڈ ، کودرے اور صافی آباد کے مقامات پر پلوں کا سنگ بنیاد رکھا جن پر مجموعی طور پر 29 کروڑ روپے سے زائد لاگت آئے گی۔وزیر اعلیٰ نے کہا کہ 60 سالوں میں ضلع مردان کو دانستہ طور پر ترقی کے ثمرات سے محروم رکھا گیا اب وقت آگیا ہے کہ ہر علاقے کو اُس کا جائز حق دیا جائے اور انصاف کے تقاضے پورے کئے جائیں اُنہوں نے کہاکہ پورے صوبے میں بلاامتیاز ترقیاتی اور تعمیر اتی کاموں کا جال بچھا دیا گیا ہے اپنے وسائل پر اپنا اختیار کے وعدے کو حقیقی روپ دے کر مخالفین کے تمام تر پروپیگنڈوں کو غلط ثابت کیا گیا ہے اُنہوں نے کہا کہ اب وہ دور نہیں جب صوبے کا خزانہ خالی ہونے کا رونا رویا جا تا تھا اُنہوں نے کہا کہ اس حلقے کے ساتھ اُن کا رشتہ ووٹر اور ممبر کا نہیں بلکہ سرخ جھنڈے اور پختون ولی کا مضبوط رشتہ قائم ہے جو سب رشتوں سے اہم ہے ۔اُنہوں نے کہا کہ خان عبد الولی خان یونیورسٹی، با چا خان میڈیکل یونیورسٹی، ایسٹرن اور ویسٹرن بائی پاسسز ، رنگ روڈ اور لاتعداد رابطہ سڑکوں کی تعمیر اوردیگرسہولتوں سے لوگوں کے مسائل اُن کی دہلیزوں پر حل ہور ہے ہیں۔اُنہوں نے کہا کہ ہم نعروں اور وعدوں کی سیاست نہیں کر تے بلکہ عمل پر یقین رکھتے ہیں گزشتہ ساڑھے چار سال کی کارکردگی سے ہم عوام کے سامنے سرخرو ہیں۔اُنہوں نے حلقہ پی کے 27 کے لئے ایک نئے گرلڑ ڈگری کالج کی منظوری کا اعلان کیا اور اس کے لئے مناسب جگہ کی نشاندہی کی ہدایا ت جاری کیں۔ اُنہوں نے اس موقع پر کہا کہ قوم کو جہالت کی تاریکیوں میں دھکیلنے والوں کے ناپاک عزائم خاک میں ملا دیئے جائیں گے ۔طالبات کے لئے نئے سکولوں اور کالجوں کاقیام ہمارے اس عزم کا ثبوت ہے۔اُنہوں نے مساجد اور مدرسوں کی تعمیر کے لئے 3 کروڑ روپے، سکولوں کا درجہ بڑھانے کے علاوہ ہاتھیاں میں جنازہ گاہ کی تعمیر کے بھی اعلانات کئے۔ حاجی سرفراز خان آف ہاتھیان نے جنازہ گاہ کے لئے مفت زمین فراہم کرنے کا اعلان کیا۔وزیر اعلیٰ نے کہا کہ ہم مدرسوں اور مساجد پر سیاست نہیں کرتے مسا جد کی تعمیر و مرمت خالصتاً اﷲ کی رضا کے لئے ہے۔وزیر اعلیٰ نے کہا کہ اﷲ تعالیٰ آئندہ آنے والے مراحل میں اُن لوگوں کو عوام کی نمائندگی کا موقع دے جو مخلوق خدا کی خدمت بہتر طریقے سے کر سکیں اور ضرورت پڑنے پرجان و مال کی قربانی دینے سے دریغ نہ کریں۔وزیر اعلیٰ کی اپیل پر جلسہ میں موجود ہزاروں افراد نے قوم کی بہاد ربیٹی اور امن و علم کی علامت ملالہ یوسف زئی کی صحت یابی کے لئے دُعا کی ۔ہزاروں عوام نے ملالہ یوسف زئی کی صحت اور درازی عمر کے لئے انتہائی جذباتی اور رقت آمیز انداز میں اجتماعی دُعا کی۔وزیراعلیٰ نے کہاکہ معصوم بچی کاقصورکیاتھاکہ اس پرقاتلانہ حملہ کیاگیاہے ۔ملالہ کاقصورصرف یہ ہے کہ اس نے اپنی سرزمین پرامن کی بات کی۔ بچیوں کو تعلیم کے زیورسے آراستہ کرنے کی بات کی ۔انہوں نے کہاکہ دہشتگردوں کااخلاق ،روایات اورانسانیت سے دورکابھی واسطہ نہیں ہے۔قبل ازیں پیپلز پارٹی ، تحریک انصاف اور دیگر سیاسی جماعتوں سے تعلق رکھنے والے نواز خان، حاجی عباس خان، محمد شیر ، ہارون الرشید ، واجد علی ، ثواب گل، امان اﷲ، عمران خان ، فیاض خان ، معبود خان، محمد اسلحہ خان، جمیل الرحمن ، با چا حسین، صدیق شاہ ، محمد گل ، واصل خان اور دیگر نے اے این پی میں شمولیت کا اعلان کیا۔ وزیر اعلیٰ نے اُنہیں مبارکباد دیتے ہوئے اُنہیں سرخ ٹوپیاں پہنائیں اس سے پہلے امیر حیدر خان ہو تی اے این پی کے بزرگ رہنما اور سابق صدر خالد خان کی عیادت کے لئے اُن کی رہائش گاہ گئے ۔اُنہوں نے خالد خان کی خیریت دریافت کی اور اُن کی صحت اور درازی عمر کے لئے نیک خواہشات کا اظہار کیا ۔اس موقع پر انجنیئرعباس ،جاویدیوسفزئی بھی موجودتھے۔
دریں اثناء خیبرپختونخوا کے وزیر اعلیٰ امیرحیدر خان ہوتی بدھ کے روز ملالہ یوسفزئی کی عیادت کے لئے سی ایم ایچ ہسپتال گئے ۔ اُنہوں نے ملالہ یوسفزئی کے والد ضیا ء الدین یوسفزئی سے بات چیت کرتے ہوئے اُنہیں ملالہ کے علاج معالجے کے لئے بھر پور تعاون کی یقین دہانی کرائی۔اُنہوں نے کہا کہ ملالہ یوسف زئی قوم کی بہادر اور نڈر بیٹی ہے اور پوری قوم کی دُعائیں اور نیک خواہشات اُس کے ساتھ ہیں۔اُنہوں نے کہا کہ ملالہ پر قاتلانہ حملے میں ملوث افراد کو گرفتار کرکے قرار واقعی سزادی جائے گی۔اُنہوں نے ملالہ یوسفزئی کو امن اور علم کی روشنی کی علامت قرا ردیا جس نے بچیوں کی تعلیم کے آگے بند باندھنے والی قوتوں کے خلاف بھر پور آواز اُٹھائی جو ہم سب کے لئے باعث فخر ہے۔ انہوں نے کہاکہ خیبرپختونخواکے عوام ملالہ کیلئے افسردہ ہیں۔اُنہوں نے ملالہ کی جلد از جلد صحت یابی اور درازی عمرکے لئے نیک خواہشات کا ا ظہار کیا اورقوم سے اپیل کی کہ وہ ملالہ کی جلدازجلدصحت یابی کیلئے دعاکرے۔