پشاور، عوامی نیشنل پارٹی کے قائد اسفندیار ولی خان نے کہا ہے کہ اپنی سرزمین کیلئے سینکڑوں شہداء کا نذرانہ پیش کرنے ‘ ریکارڈ ترقیاتی کام کرنے اور جمہوری عمل کو مستقل مزاجی کے ساتھ آگے بڑھانے کی وجہ سے عوامی نیشنل پارٹی پر عوام کا اعتماد بڑھا ہے جس کا ثبوت یہ ہے کہ 2008ء کے انتخابات میں پارٹی کے پارلیمانی بورڈ کو 185درخواستیں موصول ہوئی تھیں جبکہ اس مرتبہ پارٹی ٹکٹ کیلئے درخواست گزاروں کی تعداد 425ہے ‘ اپوزیشن بے بنیاد پروپیگنڈہ سے عوام کی آنکھوں دھول نہیں جھونک سکتی ۔

وزیر اعلیٰ ہاؤس پشاور کے جرگہ ہال میں ضلع چارسدہ کی ضلعی کابینہ ‘ پی کے تنظیموں کے عہدیداروں اور صاحب الرائے افراد کے اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے اسفندیار ولی خان نے واضح کیا کہ پارٹی ٹکٹ کے لئے درخواست دیناپارٹی کے ہر رکن کا حق ہے لیکن پارلیمانی بورڈ کے فیصلے کے بعد اس کی خلاف ورزی کو برداشت نہیں کیا جائے گا ‘ پارٹی کے فیصلوں کے خلاف کام کرنے پر کسی بھی شخص کی پارٹی میں جگہ نہیں ہوگی چاہے وہ میرا بیٹا ایمل ولی ہی کیوں نہ ہو ‘ عوامی نیشنل پارٹی کے قائد اسفندیارولی خان نے خواتین کے ووٹ پول ہونے کو یقینی بنانے پر زور دیا اور کہا کہ یہ محض انتخاب جیتنے کا وسیلہ نہیں بلکہ خواتین کی شرکت کے بغیر کوئی قوم ترقی نہیں کرسکتی ‘ جو لوگ کہتے ہیں کہ اے این پی نے خیبر پختونخوا کیلئے کیا کیا ہے ان سے پوچھا جاسکتا ہے کہ بے نام صوبے کو پختونخوا کہنے کا حق آپ کو کس نے دلایا ‘ پورے صوبے میں تعلیمی اداروں کا جال بچھایا گیا ‘ چارسدہ میں تو تاریخ کی پہلی یونیورسٹی قائم کی گئی ‘ چھ نئے ڈگری کالج قائم ہوئے ‘ سڑکیں بنی ہیں ‘ لیکن صوبائی حکومت کے ترقیاتی کام پورے صوبے میں ہوئے ہیں چترال جیسے دور دراز ضلع میں 61سال میں چار ہائر سکینڈری سکول قائم ہوئے لیکن موجودہ صوبائی حکومت کے دور میں آٹھ ہائر سکینڈری سکول بنے ہیں ‘ دیر ‘ بونیر ‘ لکی مروت اور ٹانک میں ریکارڈ ترقیاتی کام ہوئے ہیں ۔

اسفندیارولی خان نے کہا کہ اے این پی کے خلاف بے بنیاد پروپیگنڈہ کرنے والوں کا ا پنا ریکارڈ کیا ہے ؟ کیا یہ لوگ ماضی میں اقتدار میں نہیں رہے ہیں ؟ کیا اسلام کے نفاذ کیلئے انہوں نے اپنے پانچ سالہ دور اقتدار میں کوئی ٹھوس قدم اٹھایا تھا؟عوام جانتے ہیں کہ اسلام آباد کی کرسی تک پہنچنے کیلئے اسلام کا نام استعمال کیاجارہا ہے جنرل مشرف کے ساتھ پانچ سال تک اقتدار کے مزے لوٹنے والے آج کس منہ سے شریعت کے نفاذ کا دعویٰ کرتے ہیں؟ یہی لوگ تین سال سے زیادہ موجودہ حکومت کا حصہ رہے ہیں اب وہ حزب اختلاف ہونے کا ڈرامہ رچا رہے ہیں ۔

عوامی نیشنل پارٹی کے سربراہ نے واضح کیا کہ افغانستان کے اندر امن کے بغیر پاکستان میں امن قائم نہیں ہوسکتا اور پاکستان میں امن افغانستان میں امن کیلئے ضروری ہے ‘ 2014ء میں افغانستان سے غیر ملکی افواج کے انخلاء سے پہلے امریکہ ‘ افغانستان اور پاکستان کے درمیان معنی خیز مذاکرات ہونے چاہیں ‘ تاکہ غیر ملکی افواج کے ا نخلا کے بعد خطے میں انتشار نہ پھیل سکے ‘ عوامی نیشنل پارٹی خطے میں امن کیلئے کی جانے والی کوششوں کی مکمل حمایت کرے گی ۔

اس سے پہلے اجتماع سے پارٹی کے صوبائی صدر سینیٹر افراسیاب خٹک ‘ چارسدہ کے ضلعی صدر خالد خان ‘ جنرل سیکرٹری قاسم علی خان اور پی کے تنظیموں کے صدور نے بھی خطاب کیا ضلع چارسدہ کے عہدیداروں نے اپنے مرکزی صدر سے مطالبہ کیا کہ اپنی صحت اور سیکورٹی کے حالات کے پیش نظر خود انتخابی مہم میں جسمانی طور پر شرکت نہ کریں اے این پی چارسدہ کا ہر کارکن اسفندیارولی خان بن کر ان کی انتخابی مہم کو کامیاب بنائے گا ۔