safareeqiitihadپشاور،  آج مورخہ سائیس جنوری کو سہ فریقی اتحاد کا ایک اہم اجلاس عوامی نیشنل پارٹی کے میاں افتخار حسین کی صدارت میں منعقد ہوا۔ جس میں سید عاقل شاہ ، خوشدل خان ایڈووکیٹ ، صدر الدین مروت ایڈووکیٹ اور ملک غلام مصطفی پاکستان پیپلز پارٹی کی طرف سے رحیم داد خان ، ہمایون خان ، فیصل کریم خان کنڈی ، نجم الدین خان ، جمعیت علمائے اسلام کی طرف سے مولانا عطاء الرحمان ، حاجی غلام علی ، آصف اقبال داؤد زئی ، عبدالجلیل جان اور مولانا امانت شاہ نے شرکت کی۔


اجلاس میں طویل بحث و مباحثہ کے بعد اس بات کا فیصلہ کیا گیا کہ آنے والے بلدیاتی الیکشن میں تینوں جماعتیں بلدیاتی الیکشن میں اتحاد کی صورت میں حصہ لیں گی اور بلدیاتی الیکشن میں متفقہ اُمید وار کھڑے کرینگے۔ اس سلسلے میں اہم بنیادی نکات درج ذیل ہیں۔

نمبر ۱۔  سہ فریقی اتحاد ضلعی سطح پر اپنی اپنی ضلعی تنظیموں کو ہدایات جاری کرینگے کہ باہمی رضامندی سے سہ فریقی اتحاد کو عملی شکل دینے کیلئے آپس میں مل کر اجلاسوں کا انعقاد کریں۔ متفقہ اُمید وار لانے کیلئے طریقہ کار طے کریں۔
نمبر ۲-  سہ فریقی اتحاد میں شامل سیاسی جماعتیں کسی دیگر سیاسی جماعت سے انفرادی حیثیت میں بلدیاتی الیکشن کے حوالے سے مذاکرات نہیں کرے گی جب تک تمام جماعتیں باہمی رضامندی سے اس کی اجازت نہ دیں۔
نمبر ۳-  اگر ضلعی سطح پر کوئی آزاد گروپ سہ فریقی اتحاد سے بات چیت کرنا چاہے تو اس صورت میں بھی اتحاد میں شامل تمام سیاسی جماعتوں کی رضامندی ضروری ہوگی۔
نمبر ۴- بلدیاتی الیکشن میں اتحاد ضلعی سطح پر کیے جائیں گے اور اگر ضلعی سطح پر سہ فریقی اتحاد کو کسی قسم کی مشکلات کا سامنا کرنا پڑا تو صوبائی سطح موجود اراکینان اضلاع میں اختلافات کے خاتمے اور مشکلات کا حل نکالنے کی کوشش کریں گے۔
نمبر ۵-  آج کے اس اجلاس میں تینوں پارٹیوں کے موجود اراکین نے صوبائی حکومت سے مطالبہ کیا کہ بلدیاتی انتخابات جلد از جلد منعقد کرائے جائیں۔
نمبر ۶- اگر آئینی پیچیدگی نہ ہو تو تینوں پارٹیاں ایک ہی نشان پر انتخابات میں حصہ لیں گی اور جماعتی یا غیر جماعتی کسی بھی صورت میں تینوں پارٹیاں ایک ہی نام سے گروپ تشکیل دیکر انتخابات میں متفقہ اُمیدوار کھڑا کرینگی۔
نمبر ۷-  کسی بھی پارٹی کا اگر کوئی رُکن سہ فریقی اتحاد کے اُمیدوار کے خلاف الیکشن لڑے گا تو متعلقہ پارٹی اس کے خلاف ڈسپلن کی خلاف ورزی پر کارروائی کریگی۔
نمبر ۸- بلدیاتی انتخابات کیلئے تینوں پارٹیوں کی نامزد کمیٹیوں میں سے ایک ایک سربراہ مرحلہ وار ایک ایک ماہ کیلئے چیئرمین ، وائس چیئرمین ، جنرل سیکرٹری اور سیکرٹری اطلاعات مقرر ہو گا۔ رواں مہینے کیلئے میاں افتخار حسین ایک ماہ کیلئے چیئرمین جبکہ حاجی غلام علی وائس چیئرمین ، نجم الدین خان جنر ل سیکرٹری اور حاجی عبدالجلیل جان سیکرٹری اطلاعات ہونگے۔ اس دستاویز پر تینوں پارٹیوں کے سربراہان میاں افتخار حسین (ایاین پی ) مولانا عطاء الرحمان (جے یو آئی ) اور رحیم داد خان(پی پی پی) نے دستخط کیے۔