Haji Adeel [pullquote]ANP will never allow the passage of Pakistan Protection Ordinance (PPO) in the Senate of Pakistan which would take up to the controversial law during its session comencing on Monday[/pullquote]تحفظ پاکسان بل، یہ ایک کالا قانون ہے، سنیٹ سے منظور نہیں ہونے دیں گے، یہ بنیادی انسانی حقوق کے خلاف ہے جو کہ ناقابل برداشت ہے، عوامی نیشنل پارٹی کےعبوری صدر سنیٹر حاجی محمد عدیل کا اعلان

پشاور، عوامی نیشنل پارٹی کے مرکزی عبور ی صدر سینیٹر حاجی محمد عدیل نے تحفظ پاکستان بل کی مخالفت کرتے ہوئے کہا ہے کہ یہ ایک کالا قانون ہے اور ہم سینٹ میں کسی بھی صورت اس کو پاس ہونے نہیں دینگے اور اس پر بھرپور احتجاج کرینگے۔ اُنہوں نے توقع ظاہر کی ہے کہ دیگر سیاسی پارٹیاں بھی اس کالے قانون کورد کردینگی۔ یہ بنیادی انسانی حقوق کی خلاف ورزی ہے جو کہ ناقابل برداشت ہے اور اے این پی اس کو کسی بھی صورت تسلیم نہیں کرے گی۔ اُنہوں نے کہا کہ جب تک باچا خان بابا اور ولی خان بابا کا ایک بھی سپاہی زندہ ہو اس کالے قانون کو پاس ہونے نہیں دیا جائیگا۔ یہ کونسا نیا قانون ہے جس کے تحت 90 دن تک بغیر کسی وارنٹ کے کسی کو قید میں رکھنا صریحاً ظلم ہوگا جو کہ ناقابل برداشت اور انسانی حقوق کی پامالی کے زمرے میں آتا ہے۔
اُنہوں نے کہا کہ پہلے ہی سے پولیس ، رینجرز اور دیگر سیکیورٹی اداروں کے پاس بے حد اختیارات موجود ہیں اور اگر یہ قانون بھی لاگو کیا گیا تو ملک میں عوام کا جینا مشکل ہو جائیگا۔ اور سیکیورٹی ادارے بے وجہ اور بغیر کسی جرم کے لوگوں کو حراست میں لیکر اُن کو جیلوں میں بند کرنا شروع کر دینگے اور لوگ مفت میں بغیر کسی وارنٹ کے 90 دن تک حراست میں سڑتے رہیں گے اور عذاب کی زندگی گزارتے رہیں گے۔ایسے افرادجنہوں نے اس کالے قانون کی حمایت کی ہے انسان کہلانے کے بھی مستحق نہیں ہیں۔
اُنہوں نے کہا کہ عوام کی زندگیوں کو مزید دوبھر اور مشکل بنانے سے گریز کیا جائے ۔ عوامی نیشنل پارٹی سینٹ کے فلور پر اس کالے قانون کی بھرپور انداز میں مخالفت کرے گی اور اس کالے قانون کو کسی بھی صورت صورت پاس ہونے نہیں دے گی اور اگر کسی نے اسے پاس کرانے کی کوشش کی تو اُس کا راستہ روکا جائیگا۔