پشاور(پ ر) عوامی نیشنل پارٹی کی صوبائی ترجمان ثمرہارون بلور نے کہا ہے کہ پشاور میں 500سے زائد دکانوں کو سیل کرنا اور بند کرانا غریب عوام کے ساتھ سراسر زیادتی ہے۔ ضلعی انتظامیہ کی جانب سے اس قسم کے اقدامات عوام سے رزق کا وسیلہ چھیننے کے مترادف ہے۔

باچاخان مرکز پشاور سے جاری بیان میں اے این پی کی صوبائی ترجمان اور رکن صوبائی اسمبلی ثمرہارون بلور کا کہنا تھا کہ ضلعی انتظامیہ ہوش کے ناخن لیں، دکانیں بند کرانا یا سیل کرانا کسی مسئلے کا حل نہیں۔عوام میں کرونا بارے بیداری پیدا کرنے کی ضرورت ہے، نوالہ نہ چھینا جائے۔انتظامی نااہلی اور غیرسنجیدگی کی وجہ سے ہی عوام میں آگاہی نہیں پھیلائی گئی۔

انہوں نے کہا کہ پشاور انتظامیہ فوری طور پر ان دکانوں کو کھولنے کے احکامات جاری کریں ، ہم عوام کے ساتھ کھڑے ہیں۔عوام کے منہ سے دو وقت کی روٹی چھینی جاچکی ہے، مہنگائی نے کمر توڑ دی ہے۔اشیائے ضروریہ کی قیمتوں میں ہوشربا اضافے نے عوام کو ذہنی مریض بنادیا ہے۔

ثمرہارون بلور کا کہنا تھا کہ ایسے حالات میں کورونا سے بچنے کے ساتھ ساتھ بچوں کا پیٹ پالنا بھی عوام کی مجبوری ہے۔ حکومت خود ریلیف دے نہیں سکتی ، عوام سے مزدوری کا حق بھی چھینا جارہا ہے