پشاور( پ ر) وفاق کی جانب سے تعلیمی اداروں کی بندش کے اعلان کے خلاف عوامی نیشنل پارٹی نے خیبرپختونخوا اسمبلی میں تحریک التواء جمع کرادی۔

خیبرپختونخوا اسمبلی میں پارلیمانی لیڈر اور اے این پی کے صوبائی جنرل سیکرٹری سردارحسین بابک کی جانب سے جمع کرائی گئی تحریک التوا ء میں کہا گیا ہے کہ آئینی طور پر وزارت تعلیم اب صوبائی محکمہ ہے، وفاقی وزارت غیرآئینی ہے۔وفاقی حکومت کس طرح صوبوں کا اختیار استعمال کرسکتا ہے؟ تعلیمی اداروں کی بندش کرونا کا مقابلہ ہے؟پچھلے سال بھی لاکھوں بچوں اور بچیوں کا وقت ضائع ہوا۔ حکومت تعلیمی اداروں کی بندش کی بجائے ایس او پیز کے تحت تعلیمی سرگرمیاں جاری رکھنے کیلئے حکمت عملی یقینی بنائے۔

تحریک التواء کے مطابق حکومت کرونا وبا سے نمٹنے کیلئے زمینی حقائق کے مطابق انتظامات پر توجہ دیں۔حکومت اپنی ذمہ داریوں سے غافل ہیں، فوراًتعلیمی اداروں کی بندش کا حکم صادر فرماتی ہے۔عوام ہر صورت اپنی ذمہ داریاں پوری کرنے کیلئے تیار ہیں مگر حکومت کی ذمہ داری او سنجیدگی دیکھتے ہیں۔عوام کا حکومت پر اعتماد نہیں، حکومت کو پوری توجہ اور توانائی لگا کر ٹھوس اور نظر آنیوالے اقدامات کرنے ہوں گے۔