پشاور(پ ر) عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی صدر ایمل ولی خان نے کہا ہے کہ باچاخان ٹرسٹ، اے این پی اور ملگری ڈاکٹران کی مشترکہ کوششوں سے ٹیلی میڈیسن سروس کا باقاعدہ آغاز کردیا گیا ہے جس کے ذریعے گھر میں بیٹھے تمام افراد ٹیلیفون کے ذریعے اپنی بیماری کے بارے میں معلومات لے سکیں گے، کورونا وبا کے پھیلاؤ کو روکنے کیلئے احتیاطی تدابیر میں سے گھر سے بلاضرورت نہ نکلنا سب سے مقدم ہے اور اسی تناظر میں اے این پی، ملگری ڈاکٹران اور باچا خان ٹرسٹ نے فیصلہ کیا ہے کہ لوگوں کو گھروں میں ہی علاج فراہم کیا جائیگا۔ انہوں نے کہا کہ ٹیلی میڈیسن کے ذریعے لوگوں کو یہ موقع فراہم ہوگا کہ وہ کسی بھی بیماری کاعلاج بذریعہ ٹیلی فون معلوم کرسکیں گے اور ملگری ڈاکٹران کے رہنما، اراکین اور مختلف بیماریوں کے ماہر ڈاکٹرز صبح 11بجے سے دوپہر 02بجے تک لوگوں کی رہنمائی کیلئے موجود رہیں گے۔ اگر کسی کو بھی اس بارے میں معلومات درکار ہو تو ان تین نمبروں پر رابطہ کرسکتے ہیں،091-2246851/03009079919/03454647305۔ ایمل ولی خان نے مزید کہا کہ ملگری ڈاکٹران کی جانب سے پیر کے روز سے غرباء اور مستحق افراد میں راشن پیکجز کی تقسیم کا سلسلہ بھی شروع کیا جائیگا۔ انہوں نے ملگری ڈاکٹران کی پوری تنظیم اور رہنماؤں کا بھی شکریا ادا کیا اور ساتھ عوام سے اپیل کی کہ ان رابطہ نمبرز پر غیرضروری ٹیلیفون سے گریز کریں تاکہ زیادہ سے زیادہ لوگوں کو فائدہ پہنچایا جاسکے۔ایمل ولی خان نے اپنے ٹوئیٹر پر ایک اور پیغام کو شئیر کرتے ہوئے لکھا کہ اے این پی ڈاکٹرز کمیونٹی کے ساتھ ساتھ پولیس اہلکاروں کو بھی سلام پیش کرتی ہے کہ اس وباء کے وقت بھی وہ فرنٹ لائن کا کردار ادا کررہے ہیں،آج ایک بار پھر خیبرپختونخوا پولیس شہریوں کی زندگیاں بچانے میں مصروف عمل ہیں اور کورونا وباء سے بچاو کے حوالے سے لوگوں کو آگاہ کررہے ہیں۔ایمل ولی خان نے مزید لکھا کہ ہماری دعائیں پولیس جوانوں اور آفیسرز کے ساتھ ہیں،حکومت سے بھی اے این پی یہی مطالبہ کریگی کہ پولیس جوانوں کی زندگیاں بچانے کی خاطر انہیں حفاظتی کٹس مہیا کیے جائیں۔