پشاور(پ ر)عوامی نیشنل پارٹی کی ایم پی اے ثمر ہارون بلور نے کہا ہے کہ وزیراعظم عمران خان کی جانب سے حکومت کی انٹرنیٹ کے ذریعے دفاع کیلئے 42ملین سے زیادہ رقم مختص کرنا حیران کن اور پریشان کن ہے،لوگوں کو کفایت شعاری کا درس دینے والا سیاسی رہنماء آج اپنے سوشل میڈیا ایکٹیویسٹس کو نوازنے اور اپنے سیاسی مخالفین پر کیچڑ اچھالنے کیلئے آج بڑے بڑے بجٹ مختص کررہا ہے۔باچا خان مرکز پشاور سے جاری اپنے بیان میں ثمر ہارون بلور نے کہا کہ وزیراعظم عمران خان کی جانب سے سوشل میڈیا کیلئے 42ملین کا بجٹ مختص کرنا اُن کے اپنے دعووں کی نفی ہے،ملک کی بگڑتی ہوئی معاشی صورتحال اور کرونا جیسے خطرناک وباء کے باجود وزیراعظم کی جانب سے اس نازک دور میں اپنے آپ کو تنقید سے بچانے کیلئے 42ملین کا خطیر رقم منظور کرنا پاکستانی عوام کے ساتھ سراسر ظلم اور ناانصافی اور حکمرانوں کی ترجیحات کا منہ بولتا ثبوت ہے۔ثمر ہارون بلور نے کہا کہ متعلقہ ادارے وزیراعظم کے اس صوابدیدی اختیار کو استعمال کرنے کا نوٹس لیں اور وزیراعظم کو ہدایات کریں کہ اتنی خطیر رقم ملکی معاشی صورتحال کی بہتری اور کرونا وائرس کے موثر مقابلے کیلئے استعمال کریں۔انہوں نے کرونا وائرس کے حوالے سے صوبائی حکومت کے انتظامات پر بھی تنقید کرتے ہوئے کہا کہ صوبائی حکومت صرف اس بات پر اپنی جان خلاصی کررہا ہے کہ ہم اُن خاندانوں کے راشن کا انتظام کرینگے جو کرونا وائرس سے متاثر ہو،انہوں نے صوبائی حکومت سے سوال کرتے ہوئے کہا کہ اُن لوگوں کے راشن کا انتظام کون کریگا جن لوگوں کو صوبائی حکومت نے کرونا کے نام پر گھروں میں محصور رکھا ہے اور اُن کو ایک وقت کی روٹی بھی نہیں مل رہی اور ایسے حالات میں وفاقی حکومت کے ترجیحات سوشل میڈیا پر انوسمنٹ اور اپنا آپ بچانا اور صوبائی حکومت لوگوں کو لالی پاپ دے رہی ہے۔