پشاور( پ ر) عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی صدر اور پی ایس ایف کے صوبائی ایڈوائزر ایمل ولی خان نے کہا ہے کہ تعلیمی اداروں کے اندر ماحول خراب کرنیکی اجازت کسی کو نہیں دیں گے، پی ایس ایف کے رکن اچک اچکزئی پر حملہ کرنیوالوں کے خلاف انتظامیہ اور پولیس کو کارروائی کرنی ہوگی، ہم عدم تشدد کے پیروکار ہیں لیکن اپنے حق کی جنگ سے کبھی بھی پیچھے نہیں ہٹیں گے۔ ایگریکلچر یونیورسٹی پشاور میں پختون سٹوڈنٹس فیڈریشن کی نئی تنظیم کی تقریب حلف برداری سے خطاب کرتے ہوئے ایمل ولی خان نے کہا کہ اے این پی خدائی خدمتگار تحریک کے عدم تشدد کے فلسفے پر چلتے ہوئے اپنا حق مانگتی رہے گی، بابڑہ سے لے کر آئی ایس ایف کے غنڈوں کی جانب سے اچک اچکزئی پر حملہ کے وقت ہم نے عدم تشدد کا راستہ نہیں چھوڑا لیکن اس کا ہرگز مطلب یہ نہیں کہ ہم کمزور ہیں یا چپ بیٹھ کر تماشا دیکھتے رہیں گے۔ ہم باچاخان اور ولی خان کے پیروکار ہیں، ولی خان کے سیاسی جانشین کا حق بھی ادا کرتے رہیں گے۔ اپنی قوم اور مٹی کیلئے جانوں کا نذرانہ پیش کرتے رہیں گے۔ ایمل ولی خان نے کہا کہ باچاخان نے ہمیں یہی سکھایا ہے کہ بزدل وہ ہے جس میں برداشت نہیں طلباء اس قوم کا مستقبل ہے اور تعلیمی اداروں کے اندر اگر کوئی ماحول خراب کرنیکی کوشش کرے گا تو ہم اس کے خلاف کھڑے رہیں گے۔ انہوں نے مطالبہ کیا کہ اچک اچکزئی پر حملہ کرنیوالوں کے خلاف انتظامیہ اور پولیس فوری طور پر کارروائی کریں ، اے این پی پشتون روایات کے مطابق جرگہ سے بھی انکار نہیں کررہا لیکن ظلم کرنیوالوں کو سزا دینی ہوگی۔ انہوں نے اعلان کیا کہ پی ایس ایف کا جو رکن پہلی پوزیشن لے گا اسے پارٹی کی جانب سے ایک لاکھ روپے کا انعام دیا جائیگا۔