پشاور(پ ر) عوامی نیشنل پارٹی کی صوبائی ترجمان ثمرہارون بلور نے کہا ہے کہ ملک بھر میں بالعموم اور خیبرپختونخوا میں بالخصوص پٹرولیم مصنوعات کی قلت تبدیلی سرکار کی نااہلی کا نیا کارنام ہے، لوگ شدید گرمی میں پٹرول ڈلوانے گھنٹوں گھنٹوں انتظار کررہے ہیں جو پاکستان کی تاریخ میں پہلی بار دیکھا جارہا ہے۔

باچاخان مرکز پشاور سے جاری بیان میں اے این پی کی صوبائی ترجمان ثمرہارون بلور کا کہنا تھا کہ بدانتظامی اور بیڈ گورننس کی وجہ سے پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں کمی کا فائدہ عوام کو نہیں پہنچایا جارہا، مرکزی و صوبائی حکومتیں عوام کو ریلیف دینے کی بجائے اپنی جیبیں بھرنے میں مصروف عمل ہیں۔پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں کمی کا ڈرامہ رچایا گیا لیکن دوسری جانب پٹرولیم لیوی میں تین روپے کا اضافہ کیا گیا اور ایک لٹر پٹرول پر اس وقت 26روپے پٹرولیم لیوی حکومت وصول کررہی ہے۔ وبائی صورتحال میں عوام کو ریلیف کی بجائے شدید گرمی میں قطاروں میں کھڑا کرکے انتظار کروایا جارہا ہے۔

اے این پی کی صوبائی ترجمان کا کہنا تھا کہ تاریخ میں شاید عوام کو پٹرول حاصل کرنے کیلئے اتنی تکلیف کبھی بھی نہیں اٹھانی پڑی ہوگی جیسا تبدیلی سرکار کے دور حکومت میں عوام کو ذلیل و خوار کیا جارہا ہے لیکن اس کے باوجود حکومتی صفوں میں خاموشی چھائی ہوئی ہے، شاید انہیں عوام کے دکھ درد کا احساس ہی نہیں۔

ثمر بلور کا مزید کہنا تھا کہ پٹرولیم مصنوعات پر اس وقت حکومت بھرپور ٹیکس لے رہی ہے اور مطالبہ کیا کہ بین الاقوامی مارکیٹ کے مطابق تیل کی قیمتوں میں مزید کمی کی جائے۔صرف تقاریر اور اعلانات سے عوام کو کوئی فائدہ نہیں پہنچ رہا، عملی طور پر حکومت مکمل طور پر ناکام ہوچکی ہے۔