پشاور(پ ر) عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی صدر ایمل ولی خان نے ضلع کرم میں جاری فریقین کے درمیان لڑائی اور 10قیمتوں جانوں کے ضیاع پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ مزید خون ریزی کو روکنے کیلئے حکومت اور انتظامیہ فوری مداخلت کرے۔

باچاخان مرکز پشاور سے جاری بیان میں اے این پی کے صوبائی صدر ایمل ولی خان نے کہا ہے کہ کئی دنوں سے جاری لڑائی کے دوران صوبائی حکومت اور مقامی انتظامیہ نے مجرمانہ خاموشی اختیار کی ہوئی ہے جسکی ہم بھرپور مذمت کرتے ہیں۔ خاموش تماشائی بننے کی بجائے حکومت علاقے میں امن کی بحالی کیلئے فوری اقدامات اٹھائے۔ امن کی بحالی کیلئے فریقین کو فوری طور پر مذاکرات کی میز پر لایا جائے۔

ایمل ولی خان نے کہا کہ مذاکرات ہی ہر مسئلے کا حل ہے، بات چیت کے ذریعے حل نکالا جائے۔ انہوں نے عوام پر بھی زور دیا کہ اس واقعے کو مذہبی رنگ دینے سے گریز کیا جائے۔ شیعہ سنی برادری دہائیوں سے بھائی چارے کے ساتھ اس علاقے میں رہ رہے ہیں۔ فریقین کے درمیان سیز فائر کروانے کیلئے تمام وسائل بروئے کار لائے جائیں۔ اگر اس سلسلے میں عوامی نیشنل پارٹی سے کوئی تعاون درکار ہے تو ہم تیار ہیں لیکن کسی بھی لڑائی میں قیمتوں جانوں کے ضیاع کو فوری طور پر روکا جائے۔ پشتون پہلے ہی سے جنگ کے شکار ہیں اور مزید کسی بھی جنگ کا متحمل نہیں ہوسکتے۔