پشاور(پ ر) عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی سیکرٹری اقلیتی امور آصف بھٹی نے سواتی گیٹ واقعہ میں سپریم کورٹ اور ہائیکورٹ سے نوٹس لینے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ ناقص تفتیش اور ملزمان کی اب تک عدم گرفتاری ثابت کرتی ہے کہ پولیس بھی ملزمان کے ساتھ ملی ہوئی ہے۔

باچاخان مرکز پشاور سے جاری بیان میں اے این پی کے صوبائی سیکرٹری اقلیتی امور اور سابق ایم پی اے آصف بھٹی نے کہا کہ ملزم نے دوران حراست جرم کا اعتراف بھی کیا تھا لیکن ضمانت قبل از گرفتاری کے بعد اب تک انکے خلاف کوئی ایکشن نہیں لیا گیا۔اے این پی ہر ظلم کے خلاف کھڑی ہے اور اس مشکل وقت میں بھی مسیحی خاندان کے ساتھ کھڑے ہیں۔

انہوں نے تمام سول سوسائٹی اور انسانی حقوق کی تنظیموں پر بھی زور دیا کہ وہ اس ظلم کے خلاف آواز اٹھائے۔ انہوں نے متاثرہ خاندان کو انصاف کی فراہمی اور ہر ممکن تعاون کا یقین دلاتے ہوئے کہا کہ اے این پی انکے ساتھ کھڑی ہے۔

اے این پی کے صوبائی سیکرٹری اقلیتی امور نے حکومت سے بھی مطالبہ کیا کہ اسی خاندان کا ایک فرد ندیم جوزف جاں بحق ہوچکا ہے جبکہ دو افراد ابھی زخمی ہیں، حکومت انکے لئے امداد کا اعلان کرے اور پولیس جلد سے جلد ملزمان کو گرفتار کرکے انکو قرار واقعی سزا دلوائی جائے۔