بلدیاتی انتخابات میں تاخیر، سپریم کورٹ ازخود نوٹس لے،سردارحسین بابکصوبائی حکومت کا بلدیاتی انتخابات سے راہ فرار افسوسناک ہےصوبائی حکو مت عوام میں مقبولیت نہ ہونے کی وجہ سے انتخابات سے فرار کاراستہ اپنا ئے ہوئی ہےبلدیاتی حکومت کا دورانیہ اگست میں پورا ہونے کے باوجود تاخیری حربے استعمال کی جارہی ہےسپریم کورٹ سے بلدیاتی انتخابات کا آئینی تقاضا پورا نہ کرنے پر سومو ٹو ایکشن کی درخواست کر تے ہیںعوا م بلدیاتی انتخابات کرانے کیلئے بے چین ہیں تاکہ صوبائی حکومت کے خلاف اپنا فیصلہ سنا سکیں بلدیاتی انتخابات کی تیاری کیلئے حکو مت الیکشن کمیشن کی ہدایات کو ردی کی ٹو کری میں ڈال رہی ہے حکو مت الیکشن کمیشن کی ہدایات کی روشنی میں بلدیاتی انتخابات کے انعقاد کیلئے تمام تر لوازمات کو بلا تاخیر پورا کرے
پشاور( پ ر)اے این پی کے صوبائی جنر ل سیکرٹری و ڈپٹی اپوزیشن لیڈر سردار حسین بابک نے کہا ہے کہ صوبائی حکومت کا بلدیاتی الیکشن سے راہ فرار افسو سناک ہے ۔الیکشن کمیشن کی بار بار یاددہانی کے باوجود صوبائی حکو مت عوام میں مقبولیت نہ ہونے کی وجہ سے انتخابات سے فرار کاراستہ اپنا ئے ہوئی ہے ۔انہو ں نے کہا کہ صوبائی حکومت عوام کا سامنا نہیں کر سکتی اس وجہ سے بلدیاتی حکومت کا دورانیہ اگست میں پورا ہونے کے باوجود تاخیری حربے استعمال کر رہی ہے ۔ انہو ں نے کہا کہ سپریم کورٹ سے بلدیاتی انتخابات کا آئینی تقاضا پورا نہ کرنے پر سومو ٹو ایکشن کی درخواست کر تے ہیں،عوا م بلدیاتی انتخابات کرانے کیلئے بے چین ہیں تاکہ صوبائی حکومت کے خلاف اپنا فیصلہ سنا سکیں،حکومت کب تک انتخابات میں تاخیری حر بے استعمال کرے گی، بلدیاتی انتخابات کی تیاری کیلئے حکو مت الیکشن کمیشن کی ہدایات کو ردی کی ٹو کری میں ڈال رہی ہے ۔ انہو ں نے مطالبہ کیا کہ حکو مت الیکشن کمیشن کی ہدایات کی روشنی میں بلدیاتی انتخابات کے انعقاد کیلئے تمام تر لوازمات کو بلا تاخیر پورا کرنا چاہیئے اور عوام کے جذبات کو ٹھیس پہنچانے سے گریز کرنا چاہیئے۔