پشاور(پ ر)عوامی نیشنل پارٹی کے مرکزی جنرل سیکرٹری میاں افتخارحسین نے کہا ہے کہ طلباء تنظیمیں سیاسی جماعتوں کیلئے نرسریوں کا کردار ادا کررہی ہے اور طلباء یونین کی بحالی ہی سے تعلیمی اداروں میں مکالمے،دلائل اور لیڈرشپ جیسی صلاحیتیں پیدا کی جاسکتی ہیں، اگر اس ملک کے تعلیمی اداروں میں پرامن ماحول قائم کرنا ہے تو طلباء یونین کو بحال کرنا ہوگا۔باچاخان مرکز پشاور میں ہفتہ باچاخان کے پانچویں روز ” پی ایس ایف اور طلباء تنظیمیں ” کے موضوع پر منعقدہ سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے اے این پی کے مرکزی جنرل سیکرٹری اور پی ایس ایف کے سابق مرکزی صدر میاںا فتخارحسین نے کہا کہ پختون سٹوڈنٹس فیڈریشن ( پی ایس ایف) اے این پی کیلئے نرسری کا کردار روز اول سے ادا کررہی ہے اور ہمیشہ ہر محاذ پر صف اول میں کھڑی نظر آئی ہے، جمہوریت کی بحالی اور آمریت کے خلاف جنگ میں پی ایس ایف ہر کسی سے آگے نظر آئی ہے لیکن بدقسمتی سے جمہوری ادوار میں بھی طلباء یونین بحال نہ کرائے جاسکے جس سے ثابت ہوتا ہے کہ حقیقی جمہوریت ابھی تک بحال نہیں ہوئی ہے۔ نوجوان اس ملک کا سرمایہ ہے، لیڈرشپ کی صلاحیتیں پیدا کرنے کیلئے پی ایس ایف کا کردار روز روشن کی طرح عیاں ہے اور امید ہے کہ وہ یہ کردار مزید بخوبی سرانجام دیتے رہیں گے۔ میاں افتخارحسین نے کہا کہ نوجوانوں میں کتاب سے محبت کا رشتہ قائم کرنا ہوگا، اگر اس ملک کے چلانے والے تعلیمی اداروں میں پرامن ماحول پروان چڑھانا چاہتے ہیں تو یہ تمام معاملات یونین کی بحالی سے مشروط ہیں۔ ماضی میں یونین کے انتخابات ہی کی وجہ سے نظریاتی اختلاف کے باوجود جمہوری روایات تعلیمی اداروں کے اندر اور باہر زندہ رہے ۔ انہوں نے کہا کہ موجودہ سیاسی میدان میں کئی رہنما پی ایس ایف اور طلباء یونین کی پیداوار ہیں، یہ نرسری بند نہیں ہوگی۔ آئین پاکستان کی پاسداری اور بحالی کیلئے ماضی میں پی ایس ایف بڑی قربانیاں دے چکی ہے اور انہی تنظیموں کی بدولت نوجوانوں میں لیڈرشپ کی صلاحیتوں میں مزید نکھار لایا جاسکتا ہے۔ طلباء یونین کی بحالی اے این پی کا روز اول سے مطالبہ رہا ہے کیونکہ جمہوریت پر یقین رکھنے والی ہر جماعت کبھی بھی یونین کی بحالی کی مخالفت نہیں کرے گی۔ تقریب سے اے این پی مرکزی ورکنگ کمیٹی کے رکن سید اخترعلی شاہ، باچاخان ٹرسٹ ایجوکیشنل فائونڈیشن کے ایم ڈی ڈاکٹرخادم حسین،انجنیئر اعجاز یوسفزے،نورالامین یوسفزے،اے این پی پنجاب کے سیکرٹری اطلاعات ندیم سرور،خان زمان کاکڑ، پی ایس ایف کے مرکزی چیئرمین حق نواز خٹک، صوبائی صدر وسیم خٹک اور دیگر نے بھی پی ایس ایف اور طلباء تنظیموں کے موضوع پر اظہار خیال کیا۔