ہرنائی (پ ر) عوامی نیشنل پارٹی بلوچستان کے رہنماوں نے بڑھتے ہوئے عوامی مسائل پر شدید تشویش کااظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ وفاقی حکومت کی غلط پالیسیوں کی وجہ سے آج ملک میں غریب اور متوسط طبقات کا جینا دوبھر ہوچکا ہے، پشتونوں کو درپیش مسائل کا واحد حل یہی ہے کہ وہ اتحاد و اتفاق کا مظاہرہ کریں اور فخر افغان باچاخان کے قافلے سے وابستہ رہ کر اپنے ارمانوں کی تکمیل کریں، 24جنوری کو فخر افغان باچاخان اور رہبر تحریک خان عبدالولی خان کی برسی کی مناسبت سے ہرنائی میں پارٹی کے زیراہتمام جلسہ عام ہوگا جس سے ایمل ولی خان اور دیگر مرکزی و صوبائی قائدین خطاب کریں گے کارکن جلسہ عام میں اپنی بھرپورشرکت کو یقینی بنائیں اور پارٹی ذمہ داران جلسے کی تیاریوں کو جلد حتمی شکل دیں۔ ان خیالات کااظہار عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی صدر و صوبائی پارلیمانی لیڈراصغرخان اچکزئی، صوبائی جنرل سیکرٹری مابت کاکا، ضلع ہرنائی کے صدر ولی داد میانی، عبدالمالک پانیزئی، چیئر مین جمال شاہ، اصغر علی ترین، حاجی انور شاہ، کامران ترین، خالد شاہ و دیگر نے شاہرگ میں فخر افغان باچاخان کی 32ویں اور رہبر تحریک خان عبدالولی خان کی 14ویں برسی کی تیاریوں کی مناسبت سے عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی کونسل، ضلعی کابینہ، تحصیل صدور و سیکرٹریز کے مشترکہ جائزہ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔اجلاس میں جلسہ عام کی تیاریوں کا جائزہ لیا گیا صوبائی قائدین نے جلسے کی تیاریوں کو حتمی شکل دینے کی ہدایت کرتے ہوئے کہا کہ 24جنوری کوہرنائی میں پارٹی کے زیراہتمام جلسہ عام سے صوبہ پشتونخوا کے صدر ایمل ولی خان اور دیگر مرکزی و صوبائی قائدین خطاب کریں گے پشتونوں کو جدید سائنسی بنیادوں پر استوار تنظیم کی فراہمی اور پشتون معاشرے کو علم اور ہنر کا گہوارہ بنانے کے لئے فخر افغان باچاخان اور ان کے رفقائکار کا کردار ناقابل فراموش ہے آج اگر ملک میں لولی لنگڑی جمہوریت ہے تو ا س کے لئے ہمارے قائدین شب و روز محنت و جدوجہد کی اور قربانیاں دیں لیکن افسوس کہ موجودہ تبدیلی سرکار ملک سے جمہوریت اور جمہوری اقدار کا جنازہ نکالنے کے درپے ہے عوامی نیشنل پارٹی اس طرز فکر کے خلاف میدان عمل میں موجود ہے۔ انہوں نے کہاکہ خطے اور ملک کے حالات حکمرانوں سے اس بات کا تقاضہ کرتے ہیں کہ وہ سنجیدگی کا مظاہرہ کریں اور سنجیدہ نوعیت کے معاملات کو ہنسی مذاق میں اڑانے کی بجائے اس پر سیاسی قیادت سے گفت و شنید کریں انہوں نے کہا کہ اس وقت ملک میں غریب اور متوسط طبقات کا کوئی پرسان حال نہیں جبکہ اسی طرح سب سے زیادہ مشکل صورتحال کا سامنا پشتونوں کو کرنا پڑرہا ہے ان حالات میں پشتونوں کو اتحاد و اتفاق اور یکجہتی کا مظاہرہ کرنا ہوگا پشتونوں کو چاہئے کہ وہ اپنے مسائل کے حل کے لئے اپنی قومی جماعت عوامی نیشنل پارٹی سے وابستگی کو مزید مضبوط بنائیں اور فخر افغان باچاخان کے قافلے سے وابستہ ہو کر اپنے ارمانوں کی تکمیل کریں پارٹی کی سب سے پہلی ترجیح پشتون عوام ہیں پشتونوں کے جائز آئینی اور قانونی حقوق جو انسانیت اور اسلام کے عین مطابق ہیں ان کے حقوق کے حصول کے لئے عوامی نیشنل پارٹی پہلے بھی صف اول میں موجود تھی آج بھی پہلی صف میں کھڑی ہے اور ہمیشہ اپنے اصولی موقف کے ساتھ میدان میں موجود رہے گی۔ انہوں نے کارکنوں کو24جنوری کے جلسہ عوام میں اپنی بھرپور شرکت کو یقینی بنانے کی ہدایت کی۔ بعدازاں پارٹی کے صوبائی قائدین نے محمد عیسیٰ تارن کی اہلیہ کی وفات پر تعزیت و فاتحہ خوانی کی علاوہ ازیں عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی قائدین نے کلی فیض آباد میں امان اللہ ناظم کی رہائش گاہ پر دیئے گئے ظہرانے میں بھی شرکت جبکہ عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی قائدین نے پارٹی کے بزرگ رہنمائعلی محمد شاہ رسالدار اور پارٹی رکن عبدالقادر کی عیادت کی اور ان کی جلد صحتیابی کی دعا کی