پشاور(پ ر)عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی صدر ایمل ولی خان نے کہا ہے کہ وہ وقت دور نہیں جب پورے پشتون وطن میں فکر باچاخان وسعت اختیار کر جائیگی کیونکہ باقی تمام دعوے اور وعدے اپنے منطقی انجام کو پہنچ چکے ہیں،اس مرتبہ 24 جنوری کو ہرنائی میں منعقدہ فخر افغان باچاخان رہبر ملی خان عبدالولی خان کی برسی میں خود شرکت کرونگا اور یہ امر خوش آئند ہے کہ بلوچستان میں پارٹی پشتونوں کی حقیقی ترجمانی کی جانب تیزی سے گامزن ہے۔ انہوں نے نوجوانوں پر زور دیا کہ پشتون سٹوڈنٹس فیڈریشن بلوچستان کے آرگنائزنگ کمیٹی ہی صوبے میں پی ایس ایف کی ذمہ دار تنظیم ہے، آرگنائزنگ و الیکشن کمیٹی فارم سازی و بنیادی یونٹوں کی تشکیل اپریل تک یقینی بنائیں تاکہ اس کے بعد مرکزی انتخابات کا انعقاد کرایا جاسکے۔ صوبائی الیکشن کمیٹی صاف شفاف انتخابات کرانے کی پابند ہے اور آئین کی رو سے اس امر کاخیال رکھیں کہ کسی صورت ریگولر طالبعلم کے علاوہ کسی کو بھی ممبرشپ کارڈ یا تنظیمی ذمہ داری نہ سونپے اور نہ ہی سرکاری ملازم اور 28 سال سے زیادہ عمر کے ساتھی فیڈریشن کے صوبائی اور یونٹ عہدے کیلئے اہل ہے۔ انہوں نے کہا کہ صوبائی آرگنائزنگ و الیکشن کمیٹی کے چیئرمین عالمگیر خان مندوخیل ڈپٹی چیئرمین مزمل خان کاکڑ اور رکن معصوم خان میرزئی کے علاوہ کوئی اور پی ایس ایف کے معاملات کے ذمہ دار نہیں لہٰذا پی ایس ایف کے تمام اراکین ممبر سازی مہم میں بھر پور شرکت کو یقینی بناتے ہوئے صوبائی ڈھانچہ تشکیل دینے میں صوبائی آرگنائزنگ والیکشن کمیٹی کے ساتھ مکمل تعاون کو یقینی بنائیں۔