پشاور( پ ر) عوامی نیشنل پارٹی کے مرکزی ترجمان زاہد خان نے کہا ہے کہ سینئر سیاستدان اور سابق صوبائی جنرل سیکرٹری فرید طوفان کی سولہ سال بعد اپنی جماعت میں واپسی نے ثابت کردیا ہے کہ اے این پی ہی امید کی آخری کرن ہے۔ ماضی کی عوامی تاریخ گواہ ہے کہ اے این پی نے کبھی بھی عوام کے حق اور اپنے اصولوں پر کوئی سمجھوتہ نہیں کیا ہے۔ فرید طوفان سینئر سیاستدان ہے جو باچاخان اور ولی خان کے ساتھ وقت گزار چکے ہیں، ان کی اپنی جماعت میں واپس آنے سے خیبرپختونخوا میں اے این پی کی قوت مزید بڑھے گی۔ اے این پی کے مرکزی ترجمان کا مزید کہنا تھا کہ باچاخان اور ولی خان کی سیاست کو زندہ رکھنے کا نام ہی جمہوریت ہے اسلئے اے این پی کبھی بھی جمہوری روایات، جمہوری اقدار، پارلیمنٹ اور آئین کی بالادستی پر سمجھوتہ نہیں کرسکتی۔ ماضی کی تاریخ گواہ ہے کہ عوامی نیشنل پارٹی ہمیشہ حق کے ساتھ کھڑی رہی ہے اور حقیقی جمہوریت کی بحالی کیلئے جدوجہد دہائیوں پر محیط ہے۔ انہوں نے کہا کہ موجودہ نااہل حکومت ایک قانون نہیں بناسکتی بلکہ پارلیمنٹ کو غیرفعال کردیا گیا ہے جو آئین کی توہین ہے۔ سلیکٹڈ حکمرانوں نے آرڈیننس کے ذریعے ملک کو مزید کمزور کردیا ہے لیکن عوامی نیشنل پارٹی کسی بھی غیرجمہوری قوت کا راستہ روکنے کی صلاحیت رکھتی ہے اور کسی بھی غیرجمہوری اقدام کا حصہ نہیں بنے گی بلکہ پارلیمنٹ کی بالادستی اور آئینی دائرہ اختیار میں ہر ادارے کو محدود رکھنے کیلئے جدوجہد جاری رکھے گی۔