مردان(پ ر) عوامی نیشنل پارٹی کے مرکزی سینئر نائب صدر امیرحیدر خان ہوتی نے پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ کے زیراہتمام مردان ریلی کے منتظمین پر ایف آئی آر درج کرنے کی مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ مردان کی کامیاب ریلی کے بعد بوکھلاہٹ کی شکار حکومت اوچھے ہتھکنڈوں پر اتر آئی ہے۔مردان کے عوام کے تعاون سے کامیاب ریلی کے انعقاد نے سلیکٹڈ حکومت کے ہوش اڑادیے ہیں۔

مردان پریس کلب کی نومنتخب کابینہ کو مبارکباد اور بعد ازاں گفتگو کرتے ہوئے امیرحیدر خان ہوتی نے کہا کہ اس قسم کے ہتھکنڈوں سے سیاسی کارکنان کو ڈرایا نہیں جاسکتا،جیل سیاستدان کا دوسرا گھر ہے۔ضلعی انتظامیہ کو باقاعدہ جلسے کیلئے درخواست دی گئی تھی جس کا کوئی جواب نہیں دیا گیا۔میڈیا کے ذریعے درخواست کو رد کرنے کی خبر چلائی گئی جو ایک غیرسنجیدہ رویہ ہے۔

انہوں نے کہا کہ جلسے کے چھ دن بعد ایف آئی آر درج کرنا سمجھ سے بالاتر ہے،گرفتاریاں ہوئیں تو سخت ردعمل کیلئے حکومت تیار رہے۔نااہل حکومت کے وزراء اور مشیروں کے بیانات متنازع ، خاص مائنڈسیٹ کی عکاس اور کسی اور کی ترجمانی ہے۔پی ٹی آئی حکومت عوامی مینڈیٹ اور ووٹوں کی تذلیل کرکے لائی گئی ہے۔اسلام آباد لانگ مارچ تبدیلی سرکارکی تابوت میں آخری کیل ثابت ہوگا۔

سابق وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا کا کہنا تھا کہ اٹھارہویں آئینی ترمیم کو چھیڑنے سے فیڈریشن کا وجود قائم نہیں رہ سکے گا۔پی ڈی ایم میں شامل سیاسی جماعتیں استعفیں دینے آئیں گی توحکومت کے لئے حالات سنبھالنا مشکل ہو جائیں گے۔