پشاور(پ ر) عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی جائنٹ سیکرٹری و رکن صوبائی اسمبلی فیصل زیب خان نے کہا ہے کہ ضلع شانگلہ کے ہزاروں کی تعداد میں غریب مزدور اس وقت کراچی سمیت صوبہ سندھ کے دیگر شہروں میں سہولیات کی عدم دستیابی کی وجہ سے ذہنی کرب میں مبتلا ہوچکے ہیں، وہ واپس آنا چاہتے ہیں لیکن انکے لئے کوئی انتظام نہیں کیا جارہا۔صوبہ سندھ میں مکمل لاک ڈاون کی وجہ سے مزدور طبقہ روزگار اور مزدوری کرنے سے مکمل طور پر قاصر ہوچکے ہیں اور حکومتی احکامات کی روشنی میں گھروں تک محدود ہوچکے ہیں۔انہوں نے مرکزی و صوبائی حکومت سے اپیل کی کہ ان غرباء و مزدوروں کی واپسی کیلئے جلد از جلد انتظامات کئے جائیں کیونکہ رمضان المبارک کے مہینے میں ان مشکلات میں مزید اضافہ ہوگا۔ یہی مزدور کئی ہفتوں سے مرکزی و صوبائی حکومتوں سے فریاد کررہے ہیں لیکن حکمران ٹس سے مس نہیں ہورہے۔ فیصل زیب خان کا کہنا تھا کہ یہ مسئلہ سیاسی نہیں بلکہ انسانی ہے اور انسانی بنیادوں پر اس کے حل کیلئے جلد از جلد اقدامات اٹھائے جائیں تاکہ رمضان المبارک کا مہینہ یہ غریب مزدور اپنے گھروں میں گزارسکیں۔