Peshawar: Chief Minister Khyber Pakhtunkhwa Amir Haider Khan Hoti has approved up gradation and promotion policy for teachers that will be effective from july 1st, 2012. More than 1, 12,000 teachers across the province will benefit of the policy with total financial implications amounting to Rs.1115.019 million. Under the policy, primary school teachers will be up graded to BPS-12, CT, AT, TT, DM and PET to BPS-15 and Qari/Qaria to BPS-12 while basic scale for subject specialist will be BPS-17 and can be promoted to BPS-20. The CM made this historical announcement in Teachers Convention held at CM House on Wednesday. Teachers present on the occasion welcomed this announcement and termed it a greater achievement of the government Provincial Education Minister Sardar Hussain Babak, President Malgari Ustazan and chairman consultative Council Islam-ud-Din also addressed the gathering. Senior Provincial Minister Bashir Ahmad Bilour, Provincial Ministers Mian Iftikhar Hussain, Muhammad Hamayun Khan and Arbab Muhammad Ayub Jan, MPAs Mukhtiar Ahmad Khan, Sqibullah Chamkani, Aurangzeb Khan, Alamgir Khalil and Shagufta Malik, Provincial Secretary Education, Secretary Finance, ANP officer bearers, office bearer Teacher Association and large number of teachers were also present on the occasion.
The CM said that the present government has honoured one other promise made with the teachers’ community and illuminating darkness of ignorance with light of knowledge is top priority of the government. He said that this cause can’t be achieved without mental peace and economic prosperity of nation builders-teachers. He termed duties and rights mutually inter-related and stressed the teachers to play their role in mentoring future of the nation and promotion of education and the government will fulfill their just needs.
The CM said that spending 4% of GDP extending primary, secondary, higher and technical education to every nook and corner of the province, has been decided. He said that Stori Da Pakhtunkhwa program has been implemented for encouraging talented students; under which scholarships amounting to Rs.10, 000 and Rs.15, 000 have been offered to talented students while financial relief has been given to students enrolled to private schools in far-flung areas that lack govt. schools.
He said that initially 100 schools have been selected which will be increased to 400 by next year. He further added that conditional grants will be offered to schools in D.I.Khan and Bunir on performance basis, added, basic needs and facilities will be provided to schools through parents-teachers Council (PTCs). The CM termed establishment of seven new universities in four years as remarkable achievement of the government while the number of universities were nine for the last 60 years till 2008.
Mean while under the up-gradation policy primary school teachers will be upgraded from existing posts to BPS-12 while one PST post in each Primary School is to be upgraded to BPS-15 and to be re-designated as Primary School Head Teacher (PSHT) which will be filled through promotion from PST on merit with due regard to Seniority subject to the condition that he fulfill the minimum qualification required for the post of PST as per service rules. Middle and high school teacher ICTs from existing post been up-graded to BPS-15 while one third of the total to BPS-16. All the existing Arabic teachers from the existing posts has been up-graded to BPS-15 , one third of the total posts are to be upgraded to BPS-16. All the existing TTS posts are to be upgraded to BPS-15 while one third of total to sixteen.
Similarly the existing posts of Drawing Masters from the existing posts has been up-graded to BPS-15. One third of the total are to be upgraded to sixteen. Existing PET posts have been up-graded to BPS-15 while one third of the total to BPS-16. All the existing posts of Qari and Qaria have been upgraded in BPS-12 while one third of the total posts have to be upgraded to BPS-15. Appointment of teachers of entire cadres along with primary teacher will be carried out under the up-graded scales.

پشاور، خیبر پختونخواکے وزیراعلیٰ امیر حیدر خان ہوتی نے اساتذہ کےلئے اپ گریڈیشن اینڈ پروموشن پالیسی کا اعلان کر دیا ہے جس کا اطلاق یکم جولائی 2012سے ہوگا۔ پالیسی کے تحت پرائمری سکول ٹیچر کے سکیل کو بی پی ایس 12، سی ٹی، اے ٹی، ٹی ٹی، ڈی ایم، پی ای ٹی کی پوسٹوں کو بی پی ایس 15اور قاری / قاریہ کی پوسٹوں کو بی پی ایس 12میں اپ گریڈ کر دیا گیا ہے۔جبکہ سبجیکٹ سپشلسٹ کے لئے بنیادی سکیل 17ہو گا اور وہ گریڈ 20تک ترقی پا سکیں گے۔
پالیسی سے صوبے کے ایک لاکھ 12 ہزار اساتذہ مستفید ہوں گے اس پر اخراجات کا تخمینہ ایک ارب11 کروڑ روپے سے زائد ہے۔ وزیراعلیٰ نے بدھ کے روز وزیراعلیٰ ہاﺅس میں منعقدہ ٹیچرز کنونشن میں خطاب کے دوران یہ تاریخی اعلان کیا۔
اس موقع پر موجود اساتذہ نے وزیراعلیٰ کے اعلان کا پرجوش خیر مقدم کیا اور اسے موجودہ حکومت کا عطیم کارنامہ قرار دیا ۔ تقریب سے صوبائی وزیر تعلیم سردار حسین بابک، ملگری استازان کے صدر اور مشاورتی کونسل کے چیئرمین اسلام الدین نے بھی خطاب کیا۔ اس موقع پر سینئر صوبائی وزیر بشیر احمد بلور، صوبائی وزرائ، میاں افتخار حسین، محمد ہمایون خان، ارباب محمد ایوب جان، اراکین اسمبلی مختیار احمد خان، ثاقب اللہ چمکنی، اورنگزیب خان، عالمگیر خلیل، شگفتہ ملک، صوبائی سیکرٹری تعلیم مشتاق جدون، سیکرٹری خزانہ صاحبزادہ سعید، اے این پی کے مرکزی رہنما تاج الدین خان، صوبائی جنرل سیکرٹری ارباب محمد طاہر، صوبائی نائب صدر میاں مشتاق، پی ایس ایف کے ماجد خان، اور اساتذہ تنظیموں کے عہدے داران کے علاوہ اساتذہ بڑی تعداد میں موجود تھے۔
امیر حیدر خان ہوتی نے کہا کہ منتخب حکومت نے آج اساتذہ برادری کے ساتھ کیا گیا ایک اور وعدہ پورا کر دیا ہے۔ جہالت کے اندھیروں کو علم کی روشنی سے منور کرنا موجودہ حکومت کی اولین ترجیح ہے۔ معماران قوم یعنی اساتذہ کی معاشی اور ذہنی آسودگی کے بغیر یہ عظیم مقصد حاسل نہیں ہو سکتا۔ انہوں نے حقوق اور ذمہ داریوں کو لازم و ملزوم قرار دیتے ہوئے اساتذہ پر زور دیا کہ وہ قوم کے مستقبل کو سنوارنے اور معیاری تعلیم کے فروغ میں اپنی ذمہ داریاں احسن انداز میں پوری کریں۔ حکومت ان کی تمام جائز ضروریات پوری کرنے میں کوئی کسر اٹھا نہیں رکھے گی۔ انہوں نے کہا کہ خیبر پختونخوا میں پرائمری، سیکنڈری، اعلیٰ، فنی اور پیشہ ورانہ تعلیم کو صوبے کے کونے کونے تک پہنچانے کےلئے جی ڈی پی کے چار فیصد وسائل اس شعبے پر خرچ کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ وزیراعلیٰ نے کہا کہ سرکاری سکولوں میں معیار تعلیم کو بڑھانے اور ذہین طلبہ و طالبات کی حوصلہ افزائی کےلئے ستوری دا پختونخوا پروگرام پر عمل کیا جا رہا ہے جس کے تحت سرکاری سکولوں کے ذہین طلبہ و طالبات کو 10سے 15ہزار روپے کے ماہانہ وظائف دیئے جا رہے ہیں۔ اسی طرح ان پسماندہ اور دور افتادہ یونین کونسلوں میں جہاں سرکاری سکول موجود نہیں میں نجی اور سرکاری شراکت کی بنیاد پر نجی سکولوںمیں زیر تعلیم بچوں کی مالی معاونت کی جائے گی۔ ابتداءمیں اس مقصد کےلئے 100سکولوں کا انتخاب کیا گیا ہے۔ اگلے سال ان کی تعداد 400تک بڑھا دی جائے گی۔ علاوہ ازیں ڈیرہ اسماعیل خان اور بونیر میں کارکردگی کی بنیاد پر سکولوں کو کنڈیشنل گرانٹ دی جائے گی جس کے تحت پی ٹی سیز کے ذریعے سکولوں میں بنیادی ضروریات/ سہولیات فراہم کی جائیں گی۔ امیر حیدر خان ہوتی نے ہائیر ایجوکیشن کے شعبے میں چار سال کے دوران 7نئی یونیورسٹیوں کے قیام کو حکومت کاکارنامہ قرار دیا۔ انہوں نے کہا کہ 2008تک گزشتہ 60سال کے دوران 9یونیورسٹیاں موجود تھیں۔
صوبائی حکومت کی اعلان کردہ اپ گریڈیشن پالیسی کے مطابق پرائمری سکول ٹیچر کی تمام پوسٹوں کو گریڈ 12 میں ترقی دے دی گئی ہے ۔ ہر پرائمری سکول ٹیچر کی ایک پوسٹ کو گریڈ 15 میں ترقی دی جائے گی جسے پرائمری سکول ہیڈ ٹیچر کانام دیا جائے گا۔اس آسامی پر تقرری میرٹ اور سنیارٹی کی بنیاد پر کی جائے گی۔مڈل، ہائی اورہائیر سیکنڈری سطح پر سی ٹی کی تمام آسامیوں کو بی پی ایس۔15 میں اپ گریڈ کردیا جائے گا جبکہ سی ٹی ٹیچر کی مجموعی تعداد کے ایک تہائی کو سینئر سی ٹی ٹیچرز کے نام سے بی پی ایس۔16 میں ترقی دی جائے گی۔اسی طرح عربی اساتذہ کی موجودہ پوسٹوں کو بی پی ایس۔15 میں اپ گریڈ یشن کے علاوہ مجموعی تعداد کے ایک تہائی اساتذہ کو سینئر عربی ٹیچر کی حیثیت سے بی پی ایس۔16 میں ترقی دی جائے گی۔ٹی ٹی اساتذہ کی پوسٹیں بی پی ایس۔15میں اپ گریڈ کی گئی ہیں ۔ان کے ایک تہائی کو بھی سینئر ٹی ٹی اساتذہ کی حیثیت سے بی پی ایس۔16 میں ترقی دی جائے گی۔ ڈرائنگ ماسٹر کی موجودہ پوسٹوں کو بی پی ایس۔15 میں اپ گریڈکرنے کے ساتھ ساتھ اُن کی ایک تہائی تعداد کو سینئر ڈرائنگ ماسٹر کی حیثیت سے گریڈ۔16 میں ترقی دی جائے گی۔ پی ای ٹی پوسٹوں کی بی پی ایس۔15میں اپ گریڈیشن ہو گی جبکہ مجموعی تعدادکے ایک تہائی کو سینئر پی ای ٹی اساتذہ کی حیثیت سے گریڈ 16 میں ترقی دی جائے گی۔قاری / قاریہ کی تمام پوسٹیں بی پی ایس12 تک اپ گریڈکر دی گئی ہیں جن کے ایک تہائی کو بی پی ایس۔15 میں ترقی دی جائے گی۔پرائمری اساتذہ سمیت تمام کیڈر کی نئی بھرتیاں بھی اپ گریڈ ڈ سکیلوں میں کی جائیں گی۔

Video is being processed.