2019 September حکومت بلدیاتی انتخابات کرانے میں غیر سنجیدہ ہے،سردار حسین بابک

حکومت بلدیاتی انتخابات کرانے میں غیر سنجیدہ ہے،سردار حسین بابک

حکومت بلدیاتی انتخابات کرانے میں غیر سنجیدہ ہے،سردار حسین بابک

پشاور(پ ر)عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی جنرل سیکرٹری سردار حسین بابک نے کہا ہے حکومت بلدیاتی انتخابات کرانے میں غیر سنجیدہ ہے اور یہی وجہ ہے کہ اپنے بنائے گئے بلدیاتی نظام میں تبدیلی لاکر انتخابات کو طول دینے کی کوشش کررہی ہے۔باچا خان مرکز پشاور سے جاری اپنے بیان میں سردار حسین بابک نے کہا کہ ایسا لگ رہا ہے کہ صوبائی حکومت بلدیاتی انتخابات نہ کرانے کی موڈ میں ہے،الیکشن کمیشن کی طرف سے بار بار خبرداریوں کے باوجود صوبائی حکومت حلقہ بندیوں اور نئے انتخابات کیلئے دیگر لوازمات میں الیکشن کمیشن سے تعاون نہیں کررہا۔انہوں نے کہا کہ ارادتا نئے بلدیاتی نظام میں اتنی غلطیاں چھوڑی گئی ہے کہ مجبورا عدالت کو نوٹس لینا پرا اور سیاسی جماعتوں نے عدالتوں کا رخ کیا۔انہوں نے کہا کہ صوبائی حکومت نے اپنے بنائے گئے بلدیاتی نظام کو یکسرتبدیل کیا،اپنے ہی فیصلوں پر عدم اعتماد کرنا کہاں کی عقلمندی اور دانشمندی ہے۔حکومت با ر بار اپنی اکثریت کے بنیاد پر اپوزیشن کے اراء کو بلڈوز کررہی ہے جس کی وجہ سے اُن کے قوانین میں جگہ جگہ سقم پایا جاتا ہے جس کا واضح ثبوت ایسا بلدیاتی سسٹم ہے کہ اب حکومت اپنے ہی بل کو عدالت میں ڈیفنڈ نہیں کررہا۔سردار حسین بابک نے کہا کہ حکومت بروقت بلدیاتی انتخابات کے انعقاد کو یقینی بنانے کیلئے بلدیاتی نظام کے از سر نو تشکیل کیلئے تمام سٹیک ہولڈرز کو مشاورت کا حصہ بنانا چاہیے اور جماعتی بنیادوں پر بروقت انتخابات کو یقینی بنائے۔انہوں نے کہا کہ الیکشن کے بعد آئین کے مطابق ضلعی حکومتوں کو سیاسی اور مالی اختیارات منتقل کرنے چاہیے کیونکہ پی ٹی آئی کی گزشتہ حکومت نے بلدیاتی حکومتوں کو آئینی اختیارات منتقل نہیں کیے تھے اور اُس کے باجود سارے ملک میں کریڈیٹ لینے کی کوشش کررہی تھی۔انہوں نے کہا کہ گزشتہ نظام میں بھی آدھے معاشرے کو غیر سیاسی بنانے کی کوشش کی گئی تھی اور اس بار پھر سے وہ کوشش دہرائی جارہی ہے۔انہوں نے کہا کہ اے این پی بلدیاتی نظام کو مکمل سیاسی بنانے اور تمام آئینی اختیارات کی منتقلی کیلئے جدوجہد جاری رکھی گی اور بلدیاتی انتخابات کے جلد از جلد انعقاد کو یقینی بنائی گی۔

شیئر کریں