پشاور (پ ر) عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی صدر ایمل ولی خان نے ڈاکٹروں کی گرفتاریوں کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے بشری حقوق کے تحفظ کی خاطر ان کی فوری رہائی کا مطالبہ کیا ہے، اپنے ایک بیان میں انہوں نے کہا کہ جائز مطالبات کے لئے احتجاج ہر شہری کا بنیادی حق اور جمہوریت کا حسن ہے تاہم بدقسمتی سے سول آمریت کے دور میں صوبے کے تمام طبقات اپنے حقوق کیلئے سڑکوں پر ہیں،جبکہ حکمران ان کی بات سننے کی بجائے پابند سلاسل کر رہے ہیں، انہوں نے کہا کہ صوبہ بھر میں ڈاکٹروں کی ہڑتال کے باعث غریب مریض خوار ہو رہے ہیں جس سے کئی قیمتی جانیں ضائع ہونے کا خدشہ ہے، ایمل ولی خان نے کہا کہ ہسپتالوں کا نظام بہتر بنانے کی بجائے نظام کو تباہی و بربادی سے دو چار کر دیا گیا ہے ڈاکٹروں میں بے چینی بڑھتی جا رہی ہے جبکہ عوام کی مشکلات بڑھتی جا رہی ہیں۔ انہوں نے مطالبہ کیا کہ ڈاکٹروں پر تشدد و گرفتاریوں کی جوڈیشنل انکوائری کروائی جائے جبکہ صوبائی وزیر صحت اور عمران خان کے کزن نوشیروان برکی کو برطرف کیا جائے، انہوں نے کہا کہ اے این پی ڈاکٹروں کو بے یارومددگار نہیں چھوڑے گی اور ان کا بھر پورساتھ دے گی۔