پشاور (پ ر) عوامی نیشنل پارٹی کی رکن صوبائی اسمبلی ثمر ہارون بلور کی جانب سے ٹیسٹنگ سسٹم کی ناکامی اور ایٹا ٹیسٹ میں 90فیصد منفی نتائج کے خلاف جمع کرایا گیا توجہ دلاؤ نوٹس واپس کر دیا گیا اور سپیکر کی جانب سے اسے غیر موزوں قرار دے کر اسمبلی میں اس پر بحث سے معذرت کر لی، رکن صوبائی اسمبلی ثمر ہارون بلور نے کہا کہ عوامی مسائل پر توجہ دلانا اور بحث کرنا ارکان اسمبلی کا استحقاق ہے اور ہمیں اس حق سے محروم نہیں کیا جا سکتا ہے،انہوں نے کہا کہ ٹیسٹنگ سسٹم کی نکامی اداروں کی کاکرکردگی پر سوالیہ نشان ہے، ٹیچر ٹریننگ اورایٹا کے حالیہ نتائج میں 90فیصد امیدوار فیل ہوئے اور جو10فیصد کامیاب ہوئے وہ بھی صرف چند نمبروں کے عوض کامیاب قرار پائے، انہوں نے کہا کہ یہ عوامی نوعیت کا مسئلہ ہے اور اس پر اسمبلی میں بحث کی جانی چاہئے تھی تاہموزیراعلیٰ کی طرف سے نوٹس لئے جانے کے بعد اب یہ نتائج مسترد کر دیئے گئے تو بتایا جائے کہ ہمارا توجہ دلاؤ نوٹس اسمبلی کیلئے موزوں موضوع ہوا ہے یا نہیں، انہوں نے کہا کہ اس سے قبل روٹی کی قیمتوں میں اضافے کے خلاف بھی توجہ دلاؤ نوٹس جمع کرایا گیا تھا جو عوامی نوعیت کا انتہائی اہم مسئلہ تھا، ثمر بلور نے کہا کہ ہمارا مقصد عوامی مسائل کو اجاگر کرنا اور ان کے حل کیلئے ٹھوس اقدامات کی ہموار کرنا ہے، انہوں نے کہا کہ موجودہ ٹیسٹنگ سسٹم سے ہزاروں نوجوانوں کا مستقبل وابستہ ہے جس کیلئے آواز اٹھانا ہماری اولیں ترجیح ہو گی۔