پشاور(پ ر)عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی صدر ایمل ولی خان نے کہا ہے کہ ڈسپلن کی خلاف ورزی پر کسی کے ساتھ بھی رعایت نہیں کی جائیگی،بدقسمتی سے کارکنان پچھلے کئی سالوں سے یہ سوالات کرتے تھے کہ پارٹی میں کارکنان کا نہیں پوچھا جاتا،جو اختیار پارٹی آئین صدر کو دیتا ہے آج کا صوبائی صدر اُس اختیار کو پارٹی مفاد کیلئے ضرور استعمال کریگا۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے باچا خان مرکز پشاور میں عوامی ورکرز پارٹی کے مرکزی رہنماء شیرزمان خان آف بونیر کے شمولیتی تقریب سے خطاب کے موقع پر کیا۔ایمل ولی خان نے کہا کہ اے این پی بڑے سے بڑے اور چھوٹے سے چھوٹے ورکر کیلئے ایک جیسی ہے،میں نے روز اول اپنے ورکرز سے کہا تھا کہ ڈسپلن پر کوئی سمجھوتہ نہیں کرونگا،اگر انگلی کو کینسر لگ جاتی ہے تو ہاتھ کو بچانے کیلئے اُس انگلی کو کاٹنا پڑتا ہے،انہوں نے اپنے خطاب میں اپنے کارکنان سے بھی اپیل کی کہ سوشل میڈیا پر پارٹی فیصلوں کے حوالے سے بحث مباحثوں سے پرہیز کیا جائے،پارٹی فیصلے آئین کو دیکھ کر کیے جاتے ہیں،فیس بک اور ٹوئیٹر پر نہ فیصلے تبدیل کیے جاتے ہیں اور نہ ہی سوشل میڈیا کو دیکھ کر پارٹی کوئی فیصلہ کرتی ہے۔انہوں نے کہا کہ ہر فیصلے میں صاحب رائے دوستوں سے مشاورت کی جاتی ہے اور اُس کے بعد پارٹی کو قدم اُٹھاتی ہے،کوئی خوش ہوتا ہے یا نہ خوش،پارٹی آئین سب سے بالاتر ہے اور ڈسپلن پر کوئی سمجھوتہ نہیں کیا جائیگا۔انہوں نے اپنے مخالفین کو بھی تنبیہ دیتے ہوئے کہا کہ ہمارے مخالفین ہم میں زیادہ دلچسپی لینا چھوڑ دے ایسا نہ ہو کہ وہ اپنی پارٹی یا نظریہ چھوڑ کر میرے قافلے میں شامل ہوجائے کیونکہ ایک بار اگر کوئی اے این پی کی حقیقت سے باخبر ہوجاتا ہے تو اُس کو پاکستان کی سب سے بڑی جمہوری پارٹی اے این پی ہی نظر آئیگی،اے این پی وہ واحد جماعت ہے جس میں ایک ادنیٰ ورکر سے لیکر مرکزی صدر تک کے سب لوگ ایک جیسے اور برابر ہے،اگر پارٹی کے تنظیمی فیصلوں سے سب سے زیادہ دکھ ہمارے مخالفین کو ہوتا ہو تو یہ اس بات کا واضح ثبوت ہے کہ پارٹی صحیح ٹریک پر ہے۔انہوں نے کہا کہ آئین پر عمل در آمد کرانا بھی اے این پی کو ولی خان سے وراثت میں ملا ہے،جس طرح ہم ولی خان کے دیگر ہدایات پر عمل پیرا ہوکر پارٹی کو آگے لیکر جارہے ہیں اسی طرح ڈسپلن کے حوالے سے بھی پارٹی کے اندر نظم و ضبط پر کوئی سمجھوتہ نہیں کیا جائیگا اور یہی سلسلہ اگر ایمل ولی خان کو بھی شوکاز ملنے پر آجاتا ہے تو میں بھی پارٹی کو جوابدہ ہوں کیونکہ پارٹی آئین ہی ہے جس نے اس گھر کو ایک گھر بنا کر رکھا ہے۔انہوں نے مزید کہا کہ وہ بہت جلد صوبہ بھر کے اضلاع کا تفصیلی دورہ کرینگے اور گھر گھر جاکر پارٹی کے ناراض کارکنان پر جرگے کیے جائینگے،اسی سلسلے میں 16ستمبر سے سوات کا تفصیلی دورہ کیا جائیگا جہاں پر 22ستمبر تک کارکنان پر جرگے کیے جائینگے۔