پشاور ( پ ر ) میاں راشدشہید فاؤندیشن کے چیئرمین میاں افتخار حسین نے کہا ہے کہ راشد شہید فاؤنڈیشن نے آئی ڈی پیز کے بچوں کو زیور تعلیم سے آراستہ کرنے کی ذمہ داری سنبھال لی ہے اور ان کے روشن مستقبل کیلئے حتی الوسع کاوشیں جاری رکھے گی ، ان خیالات کا اظہار انہوں نے راشد شہید ایجوکیشن اکیڈمی میں منعقدہ سالانہ تقسیم انعامات کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا،اس موقع پر سکول میں زیر علیم بچوں کے والدین نے بھی شرکت کی جبکہ میاں افتخار حسین نے نمایاں پوزیشن حاصل کرنے والے بچوں میں انعامات تقسیم کئے ، تقریب کے دوران بچوں نے مختلف خاکے اور ٹیبلو پیش کئے جنہیں شرکاء نے بے حد سراہا ، میاں افتخار حسین نے اپنے خطاب میں کہا کہ ہم نے2012میں اہل علاقہ اور مخیر حضرات کے بھرپور تعاون سے راشد شہید فاؤنڈیشن کی بنیاد رکھی ،بیٹے کی شہادت کے بعد یہ اکیڈمی میرا خواب تھی ، بعد ازاں ایجوکیشن اکیڈمی کیلئے100کنال اراضی خریدی گئی اور اس کی چاردیواری مکمل کی گئی جس میں علاقے کے عوام کا بہت بڑا کردار رہا ، انہوں نے کہا کہ آج میرا سر فخر سے بلند ہے کہ اس سکول میںآئی ڈی پیز کے 200 بچے اور بچیاں تعلیم حاصل کر رہے ہیں جن کیلئے سکول یونیفارم ، کتابیں حتی کہ جوتے تک خریدے گئے ، انہوں نے کہا کہ اس نیک کام میں اہل علاقہ سمیت تمام افراد نے بہت مثبت کردار ادا کیا اور مجھ پر اعتماد کرتے ہوئے میری حوصلہ افزائی بھی کی، انہوں نے کہا کہ آئی ڈی پیز بچوں کو زیور تعلیم سے آراستہ کرنا حکومت اور این جی اوز کی ذمہ داری تھی لیکن راشد شہید اکیڈمی نے یہ ذمہ داری بے لوث طور پر سنبھالی ہے، انہوں نے سکول میں موجود خواتین اساتذہ کو بھی خراج تحسین پیش کیا ، میاں افتخار حسین نے کہا کہ بچوں کی تعلیم اور خصوصاً آئی ڈی پیز کی بچوں کی فلاح اور تربیت کیلئے حکومت سمیت معاشرے کے ہر شہری پر ذمہ داری عائد ہوتی ہے،انہوں نے ایجوکیشن اکیڈمی کی تعمیر میں تعاون کرنے والوں کو سلام پیش کیا اور کہا کہ جو اعتماد لوگوں نے مجھ پر کیا ہے اس پر پورا اترنے کی بھرپور کوشش کروں گا، تقریب سے میاں محمد زبیر،تبسم شمس کتوزئی اور حاجی افتخار نے خطاب کرتے ہوئے مخیر حضرات سے اپیل کی ہے کہ قوم کا مستقبل روشن بنانے کے اس مشن میں راشد شہید ایجوکیشن اکیڈمی کی بھرپور امدا کریں۔