پشاور( پ ر)پختون ایس ایف کے صوبائی ایڈوائزر اور اے این پی کے صوبائی ترجمان صدرالدین مروت نے پی ایس ایف کارکنان پر زور دیا ہے کہ وہ صبر کا دامن نہ چھوڑیں۔ ہم باچا خان کے عدم تشدد کے پیروکار ضرور ہیں مگر اپنے بچوں اور پی ایس ایف کارکنان کو غنڈہ گردوں کے رحم و کرم پر نھیں چھوڑ سکتے۔ اسلام آباد کے شفاء انٹرنیشنل ہسپتال میں زرعی یونیورسٹی کے جنرل سیکرٹری اچک خان اچکزئی کی عیادت کے موقع پر طلبہ سے گفتگو کرتے ہوئے صدرالدین مروت نے کہا کہ ہم نے پی ٹی آئی حکومت سمیت اس واقعے میں ملوث تمام افراد سے حساب لینا ہے۔ کوئی اس خوش فہمی میں نہ رہے کہ وہ پی ایس ایف کارکنان کو دبائو میں لائیں گے، وہ شاید ہماری تاریخ سے بے خبر ہیں۔ اس قسم کی سوچ رکھنے والے ذرا پی ایس ایف کی تاریخ اٹھا کر دیکھ لیں جس نے ہر جابر کی آنکھوں میں آنکھیں ڈال کر صعوبتیں برداشت کیں لیکن کبھی بھی اپنی منزل و مقصد سے پیچھے نہیں ہٹیں۔انہوں نے خبردار کیا کہ اگر حکومت اس وقت اقتدار کے نشے میں مست آئی ایس ایف کی سرپرستی کررہا ہے یا پولیس اور انتظامیہ زرعی یونیورسٹی میں مجرمانہ کردار ادا کررہی ہے تو ہم انہیں متنبہ کرتے ہیں کہ پختونوں میں اسکے علاوہ بھی ایک قانون موجود ہے اور اس حد تک جانے کیلئے ہمیں مجبور نہ کیا جائے