پشاور(پ ر) این ایف سی ایوارڈ کے جلد از جلد اجراء کے حوالے سے قرارداد خیبر پختونخوا اسمبلی میں جمع کردیا گیا ہے،قرارداد اے این پی کے پارلیمانی لیڈر سردار حسین بابک کی جانب سے جمع کرایا گیا ہے،جمع کیے گئے قرارداد میں کہا گیا ہے کہ صوبائی اسمبلی مرکزی حکومت سے مطالبہ کریں کہ نئے این ایف سی اپوارڈ کا اجراء جلد از جلد کیا جائے،تاکہ خیبر پختونخوا کو اپنا آئینی مالی حصہ ملنا یقینی ہو،قرارداد میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ خیبر پختونخوا میں نئے اضلاع کا اعلان شدہ 3فیصد حصہ بھی تاخیر کا شکار ہے،خیبر پختونخوا کو دہشتگردی نے بہت بڑا نقصان پہنچایا ہے،تجارتی اور کاروباری موحول متاثر ہوچکا ہے،جس کی وجہ سے بے روزگاری میں اضافہ ہوچکا ہے،کارخانے بند ہیں اور معاشی سرگرمیاں ماند پڑ گئی ہیں۔قرارداد میں مزید کہا گیا ہے کہ پورے صوبے میں تعلیم اور صحت جیسے شعبے زبوں خالی کا شکار ہیں،جرائم میں آئے روز اضافہ ہوتا جارہا ہے،نئے این ایف سی ایوارڈ کے جاری کرنے میں تاخیر سے نئے مسائل جنم لے رہے ہیں اور احساس محرومی میں اضافہ ہوتا جارہا ہے۔مرکزی حکومت کی جانب سے نئے این ایف سی ایوارڈ کے اجراء میں تاخیری حربے قابل افسو س ہیں۔قرارداد میں مطالبہ کیا گیا ہے کہ ملکی سلامتی اور عوام کے فلاح وبہبود کیلئے آئینی تقاضوں کو بروقت عملی بنانا ملک و قوم کی مفاد میں ہیں،لہذا مرکزی حکومت مزید تاخیر کے بجائے فوری طور پر نئے این ایف سی ایوارڈ کے اجراء کو عملی بنائیں۔