پشاور( پ ر) خیبرپختونخوا کے تاریخی تعلیمی ادارے ایڈورڈز کالج پشاور کی بندش اور درپیش مشکلات کے حل کیلئے اے این پی نے خیبرپختونخوااسمبلی میں تحریک التواء جمع کرادی۔ صوبائی اسمبلی میں پارلیمانی لیڈر اور اے این پی کے صوبائی جنرل سیکرٹری سردارحسین بابک کی جانب سے جمع کرائی گئی تحریک التواء میں کہا گیا ہے کہ صوبے کا تاریخی تعلیمی ادارہ ایڈورڈز کالج گزشتہ دو ہفتوں سے بند ہے اور طالبعلموں کا قیمتی وقت ضائع ہورہا ہے۔ یہ تاریخی کالج صوبے کے تعلیمی خدمات میں پیش پیش ہے اور معیاری تعلیم کی فراہمی میں اپنا نام رکھتا ہے۔ تحریک التواء کے متن کے مطابق گزشتہ کئی مہینوں سے کالج کے حوالے سے اخبارات میں مختلف قسم کے بیانات کے آنے سے کالج کے تعلیمی کام اور تاریخی نام پر برے اثرات مرتب ہورہے ہیں۔ حکومت کو کالج کے انتظامی اور دیگر معاملات خوش اسلوبی اور میرٹ پر حل کرنے کیلئے ایک اعلی سطحی پارلیمانی کمیٹی تشکیل دی جائے تاکہ کالج میں موجود انتظامی مسائل ، کالج کو درپیش مالی و انتظامی مسائل اور دیگر مشکلات کی نشاندہی کرکے اس عظیم تعلیمی ادارے کے عظیم تر مفاد میں اپنے سفارشات مرتب کرسکیں۔ دریں اثناء کالج کو فی الفور کھول دیا جائے تاکہ طلباء کا قیمتی وقت ضائع ہونے سے بچایا جاسکے اور صوبہ بھر کے طلباء و طالبات زیور تعلیم سے آراستہ ہوں۔ حکومت کو کالج کو درپیش مشکلات اور مسائل کو سنجیدگی کیساتھ حل کرنا چاہئیے اور اس عظیم تعلیمی ادارے کیساتھ ہر قسم کا مالی تعاون جاری رکھنا چاہئیے