پشاور (پ ر) عوامی نیشنل پارٹی کے مرکزی ترجمان زاہد خان نے کہا ہے کہ فوجی اہلکاروں اور عوام کے درمیان آئے روز تکرار کے واقعات سامنے آ رہے ہیں جو نیک شگون نہیں، مری میں عوام کی اہلکار کے ساتھ تکرار کی ویڈیو سامنے آنے کے بعدسوات میں فوج کے خلاف نکالے گئے جلوس سے دکھائی ایسا دے رہا ہے کہ ملک میں اندر ہی اندر لاوا پک رہا ہے،اپنے ایک بیان میں انہوں نے کہا کہ عوام موجودہ فوجی قیادت کے خلاف اٹھ رہے ہیں لہٰذا ایسی صورتحال میں آرمی چیف جنرل باجود توسیع کی درخواست دینے کی بجائے ادارے کو بچانے کیلئے ریٹائر ہو جائیں، کریں،انہوں نے کہا کہ ایک طرف ہمارے اداروں اور عوام کے درمیان ٹکراؤ کا ماحول بن رہا ہے جبکہ دوسری جانب کشمیر کا مسئلہ گھمبیر صورت حال اختیار کر رہا ہے، انہوں نے کہا کہ موجودہ وقت اس بات کا متقاضی ہے کہ ہمیں ملک کے لیے اکھٹا رہنا ہے، ورنہ خدا نخواستہ صورت حال مشکل ہو جائے گی، زاہد خان نے مزید کہا ایسا نہ ہو کہ ہمارا حشر بھی لیبیا،ترکی اور عراق جیسا ہو، انہوں نے کہا کہ نازک صورتحال میں ملک کے اداروں کے سربراہان کو ادراک کرنا ہو گا کہیں عمران خان کی حکومت کو بچانے میں ملک نہ گنوا بیٹھیں، اگر ایسی کوئی صورتحال بنی تو ہمارے ملک کی حکومتی اور عسکری قیادت کس طریقے سے نمٹے گی، انہوں نے تجویز پیش کی کہ بہتر ہے جنرل باجوہ مدت ملازمت میں توسیع نہ لیں اور ریٹائر ہو جائیں تاکہ فوج میں نئی قیادت سامنے آئے اور ادارہ بچ جائے،کہیں ایسا نہ ہو کہ ہمارا فوج کا ادارہ باقی اداروں، عدلیہ کی طرح تباہ ہو جائے،اس سے ملک کو بہت زیادہ نقصان پہنچے گا۔