پشاور ( پ ر )عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی صدر ایمل ولی خان نے پٹرولیم مصنوعات میں اضافہ مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ تبدیلی سرکار نے عید سے پہلے عوام پر پٹرول بم گراکے ثابت کردیا کہ ان میں حکومت کرنے کی کوئی صلاحیت نہیں۔9مہینوں میں غریب عوام کی چیخیں نکال دی، موجودہ حکومت غربت کے بجائے غریب کو ختم کرنے کی پالیسی پر عمل پیرا ہے۔ باچاخان مرکز پشاور سے جاری کردہ ایک بیان میں ایمل ولی خان کا کہنا تھا کہ پٹرولیم مصنوعات میں بار بار بے تحاشا اضافے نے عوام کی نیندیں حرام کردی ہیں، مہنگائی اور بے روزگاری کی وجہ سے ہر انسان بددعاﺅں پر اتر آیا ہے، لوگ خودکشیوں اور فاقہ کشی پر مجبور ہوگئے ہیں۔ ایمل ولی خان کامزید کہنا تھا کہ عمران خان کنٹینر پر چڑھ کر اچھی تقریر کرسکتا ہے لیکن حکومت کرنے کی ان میں کوئی صلاحیت نہیں۔قلیل عرصہ میں سب کچھ عوام کے سامنے آگیا، کاروباریں ختم ہوکر رہ گئی ہیں،معاشرے کا ہر طبقہ مہنگائی کی وجہ سے پریشان ہے، وزیراعظم کے پاس صرف یہ جواز رہ گیا ہے کہ گھبرانا نہیں ہے،نوجوانوں کو ورغلانے والے وزراءاور ان کے لیڈران آج عوام کا سامنا نہیں کرسکتے۔ انہوں نے کہا کہ مہنگائی اور بے روزگاری کی وجہ سے جرائم کی شرح میں روز بروز اضافہ ہورہا ہے۔ رمضان المبارک کے مہینے میں عید سے پہلے غریب عوام کو ریلیف دینے کے بجائے انہیں مہنگائی کے بوجھ تلے دبا دیا۔ عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی صدر کا مزید کہنا تھا کہ حکومت کو قوم سے معافی مانگ لینی چاہئیے، عوام اور غریب مزدورکار لوگوں کی بددعائیں تباہی ہوگی، حکومت غریب عوام کو مزید تنگ کرنے کے بجائے اسلام آباد میں کنٹینر پر سارے قوم سے معافی لیں اور اعتراف کرلیں کہ کپتان اور اسکی ٹیم حکومت چلانے کے قابل نہیں۔ تبدیلی سرکار کی حکومت آتے ہی لوگوں پر قحط سازی شروع ہوگئی ہے، روپے کی قمیت تاریخ کے کم ترین سطح پر نیچے آگئی ہے، خوراک اور غیرخوراکی مواد کی قیمتیں آسمان سے باتیں کررہی ہے، تجارتی اور کاروباری سرگرمیاں ماند پڑگئی ہیں، ہر طرف مایوسی پھیلی ہوئی ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ مسلط اور کٹھ پتلی حکومت نے عوام کا کچا چھٹا نکال دیا ہے، خزانہ کنگال ہے، ٹیکسوں، قیمتوں میں اضافہ اور روزانہ کے بنیاد پر ہر شعبے کے لوگوں سے جرمانے وصول کئے جارہے ہیں۔