پشاور (پ ر) عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی جنرل سیکرٹری سردار حسین بابک نے کہا ہے کہ اے این پی سٹی ڈسٹرکٹ کے صدر سرتاج خان کی شہادت کے خلاف منگل 2جولائی دن گیارہ بجے صوبائی اسمبلی کے سامنے عظیم الشان احتجاجی مظاہرہ کیا جائے گا،سانحہ کے خلاف صوبائی صدر ایمل ولی خان کی ہدایت پر صوبے میں تین روزہ سوگ کا اعلان کیا گیا ہے اس دوران اے این پی کے تمام ضلعی دفاتر پر پارٹی پرچم سرنگوں رہیں گے، اپنے ایک بیان میں سردار حسین بابک نے کہا کہ حکومت شہریوں کے جان و مال کے تحفظ میں ناکام ہو گئی ہے،نامعلوم دہشت گرد دن دیہاڑے جسے جب جہاں چاہیں با آسانی ٹارگٹ کر سکتے ہیں جو حکومتی رٹ پر سوالیہ نشان ہے،انہوں نے کہا کہ اس افسوسناک واقعے کے بعد یہ ثابت ہو گیا ہے کہ دہشتگرد پھر سے منظم ہو گئے ہیں اور ایک سازش کے تحت صوبے کے حالات خراب کیے جا رہے ہیں، صوبے کے طول و عرض سمیت پشاور میں جہادی تنظیمیں مختلف ناموں سے سرگرم ہیں اور چندے اکٹھے کرنے کے ساتھ ساتھ معصوم شہریوں کو ورغلانے میں بھی مصروف ہیں، لوگوں کو سرعام دعوت دی جا رہی ہے جبکہ انٹیلی جنس ادارے خاموش تماشائی بنے بیٹھے ہیں،انہوں نے کہا کہ اے این پی کو ٹارگٹ کرنے کا سلسلہ رکنے کا نام نہیں لے رہا لیکن اب مزید جنازے نہیں اٹھائیں گے، انہوں نے کہا کہ پارٹی عہدیداروں، کارکنوں، امن پسندوں عدم تشدد کے علمبرداروں اور پرا من شہریوں کو سرتاج خان کی شہادت کے خلاف مظاہرے میں شرکت کی دعوت دی جاتی ہے تاکہ ظلم کی سیاہ رات کے خلاف مؤثر آئواز اٹھا کر اپنی آنے والی نسلوں کو محفوظ بنایا جا سکے۔