پشاور ( پ ر ) عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی جنرل سیکرٹری سردار حسین بابک نے فاٹا اضلاع کیلئے اعلان شدہ سو ارب روپے کے ترقیاتی پیکج میں تاخیر پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ قبائلی عوام اس پیکج کے منتظر ہیں،اپنے ایک بیان میں انہوں نے کہا کہ حکومت وضاحت کرے کہ قبائلی اضلاع کیلئے منظور شدہ سو ارب روپے کے ترقیاتی پیکج سے کن کن شعبوں میں کون سے منصوبے کب شروع ہونے جا رہے ہیں، انہوں نے کہا کہ قبائلی عوام نے طویل عرصہ تک دہشت گردی کا جوانمردی سے مقابلہ کیا اور دہشت گردی و آپریشنز کی وجہ سے وہاں کے انفرا سٹرکچر کو بری طرح نقصان پہنچا ہے ، سردار حسین بابک نے کہا کہ جبکہ عوام کی ذاتی املاک اور کاروبار کو اربوں روپے کا خسارہ برداشت کرنا پڑا، انہوں نے کہا کہ لاکھوں کی تعداد میں غیور پختون قبائلی بے گھر ہو گئے لہٰذا ھکومت زبانی جمع خرچ سے قبائلی علاقوں کے عوام کو ورغلانے سے گریز کرے، انہوں نے کہا کہ تعلیم ،صحت اور روز مرہ زندگی کے معمولات کو بحال کرنے اور عوام کو اشیائے ضروریہ کی فراہمی میں مزید تاخیر ناقابل برداشت ہے ، انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ حکومت این ایف سی ایوارڈ کا اجراء کر کے قبائلی اضلاع کیلئے 3فیصد حصہ کا اجرا یقینی بنائے ، انہوں نے کہا کہ قبائلی اضلاع کے انتظامی معاملات میں روز مرہ کی مشکلات کو ہنگامی طور پر ختم کیا جانا چاہئے ،سردار بابک نے مزید کہا کہ اے این پی قبائلی اضلاع میں صوبائی اسمبلی کی نشستوں پر بھرپور، منظم اور پوری تیاری کے ساتھ مقابلے کیلئے تیار ہے،انہوں نے کہا کہ پارٹی تنظیمیں اور کارکن رابطہ عوام مہم میں تیزی لائیں اور الیکشن کی تیاریاں زور وشور اور مؤثر انداز میں شروع کریں۔