پشاور (پ ر) عوامی نیشنل پارٹی کے مرکزی جنرل سیکرٹری میاں افتخار حسین نے کہا ہے کہ قبائلی اضلاع میں شفاف اور غیر جانبدارانہ انتخابات کا انعقاد یقینی بنانا الیکشن کمیشن کی ذمہ داری ہے،20جولائی کو عوامی مینڈیٹ چوری کیا گیا تو 25جولائی کے احتجاج میں بھرپور جواب دیا جائے گا، ان خیالات کا اظہار انہوں نے پی کے115درازندہ ڈی آئی خان میں انتخابی جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے کیا، میاں افتخار حسین نے کہا کہ قبائلی عوام اپنے محسنوں کو پہچانیں اور الیکشن میں اے این پی پر بھرپور اعتماد کا اظہار کرتے ہوئے اپنی آنے والی نسلوں کا مستقبل محفوظ بنائیں، انہوں نے کہا کہ عمران خان کی اتنی حیثیت نہیں تھی کہ وہ حکومت میں آ سکتا لیکن اس کے پیچھے موجود اسٹیبلشمنٹ نے اسے چور دروازے سے اقتدار دیا اور قوم کے مینڈیٹ کی توہین کی گئی، انہوں نے کہا کہ اسٹیبلشمنٹ کی غلط سوچ کی وجہ سے آج ملک دیوالیہ ہو چکا ہے، مہنگائی عروج پر ہے جبکہ پاکستانی روپیہ دنیا بھر کی کرنسی سے نیچے گر چکا ہے، انہوں نے کہا کہ پاکستانی روپے کی اتنی بے قدری تاریخ میں نہیں ہوئی، درحقیقت عمران خان کا مقصد ملک کو نقصان پہنچا کر مخصوص لابی کو خوش کرنا ہے، میاں افتخار حسین نے کہا کہ مہنگائی کے طوفان سے بچے بھوک سے مر رہے ہیں لاکھوں لوگ بے روزگار ہو چکے ہیں سٹاک مارکیٹ آئے روز کریش ہوتی جا رہی ہے،لہٰذا اب بھی وقت ہے اسٹیبلشمنٹ سالیکٹڈ نااہل کی وکالت کرنے کی بجائے اس کے پیچھے سے ہٹ جائے، انہوں نے کہا کہ شفاف انتخابات ہوں تو عمران نیازی میانوالی سے باہر نہیں نکل سکتا،انہوں نے کہا کہ 126دن تک پی ٹی آئی کی ڈانس پارٹی اسلام آباد میں جاری رہی اور اس دوران قومی املاک پر حملے بھی کئے گئے لیکن کسی ادارے کو ہوش نہ آیا کہ ان دہشت گردوں کے خلاف کارروائی کرتا، جبکہ اس وقت کے وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا بھی سٹیج پر ناچتے رہے،انہوں نے کہا کہ عمران خان ملک کیلئے سیکورٹی رسک ہے اور اب اس سے ملک و قوم کو نجات دلانے کا وقت آ چکا ہے، میاں افتخار حسین نے کہا کہ ہم کسی کے خلاف نہیں بلکہ صرف اپنے نظریے اور سوچ کی وکالت کر رہے ہیں،گزشتہ چالیس سال سے سازش کے تحت پختونوں کا خون بہایا گیا، اگر باچا خان کی بات مان لی جاتی تو ہزاروں قیمتی جانیں بچائی جا سکتی تھیں لیکن بدقسمتی سے اس وقت انہیں غدار کہا گیا،انہوں نے کہا کہ آج جو لوگ اقتدار کے مزے لوٹ رہے ہیں وہ دہشت گردی کے خلاف جنگ میں کہیں منظر عام پر نہیں آئے،صرف باچا خان کے سپاہی تھے جو سر پر کفن باندھ کر دہشت گردوں کا مقابلہ کرتے رہے، میاں افتخار حسین نے کہا کہ قبائلی عوام 20جولائی کو اے این پی کے امیدواروں کے حق میں ووٹ دے کر اپنا مستقبل سنوار سکتے ہیں۔