پشاور ( پ ر ) عوامی نیشنل پارٹی کے مرکزی جنرل سیکرٹری میاں افتخار حسین نے محمد شہباز شریف کی بریت کے عدالتی فیصلے کو خوش آئند قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ عدالتی فیصلے کے بعد عمران خان کی جھوٹ اور فیبی سیاست کا پول کھل گیا ہے، اپنے ایک بیان میں انہوں نے کہا کہ حکومتی ترجمان کا مؤقف دھمکی آمیز تھا ، سول مارشل لاء ایڈمنسٹریٹر کے ترجمان نے عدالتی فیصلہ کے بعد عدلیہ اور نیب کو جس انداز میں دھمکیاں دیں وہ ملکی روایات کے برعکس ہے،انہوں نے کہا کہ سیاسی مخالفین کے خلاف احتساب کو بطور ہتھیار استعمال کرنے کی کوشش ناکام ثابت ہوئی اور حکمران اداروں پر دباؤ ڈال کر مرضی کے فیصلے چاہتے ہیں،، انہوں نے کہا کہ شہباز شریف کی رہائی کے بعد پی اے سی کی چیئرمین شپ کے معاملے پر اب حکومت کا مؤقف کیا ہو گا؟انہوں نے کہا کہ عدالتی فیصلے کے بعد یہ حقیقت کھل کر سامنے آ چکی ہے کہ حکومت نے اپوزیشن کے خوف سے اسے نشانے پر لے رکھا ہے،میاں افتخار حسین نے تجویز پیش کی کہ احتساب کا عمل حکومتی ایوانوں اور ان کے گھروں سے شروع کیا جائے تو ہم بھی صدق دل سے حکومت کے ساتھ ہونگے،انہوں نے واضح کیا کہ اے این پی ہمیشہ سے بلا امتیاز احتساب کے حق میں ہے اور شفاف و غیر جانبدار احتساب پر یقین رکھتی ہے۔