پشاور ( پ ر ) عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی ڈپٹی جنرل سیکرٹری ایمل ولی خان نے کہا ہے کہ پاکستان ہمارا ملک ہے اور پاک بھارت کشیدگی روکنے کیلئے باچا خان کے بتائے ہوئے رستے پر چلتے ہوئے اپنا کردار ادا کریں گے، ولی باغ چارسدہ میں مختلف اضلاع کے پارٹی وفود سے بات چیت کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ اے این پی جنگوں کے حق میں نہیں تمام مسائل مذاکرات کے ذریعے حل کئے جانے چاہئیں تاہم اگر پھر بھی ہم پر جنگ مسلط کی گئی تو ایسی صورت میں اپنے ملک کے ساتھ کھڑے ہونگے، اے این پی کے کارکن اور نوجوان پارٹی کا قیمتی سرمایہ ہیں اور ملی مشر اسفندیار ولی خان کی ہدایات کی روشنی میں اس نازک صورتحال میں ملک کی دفاع و سلامتی کیلئے کردار ادا کریں گے ، ایمل ولی خان نے کہا کہ دو ملکوں کے درمیان جنگ حب الوطنی کا سرٹیفیکیٹ نہیں ہو سکتی ،ضرورت اس امر کی ہے کہ تمام اختلافات بالائے طاق رکھ کر خطے کو جنگ کا ایندھن بننے سے بچانے کیلئے کردار ادا کریں،انہوں نے کہا کہ اے این پی عدم تشدد پر یقین رکھنے والی جماعت ہے اور آج بھی ہماری آواز موجودہ صورتحال میں امن کے حق میں ہو گی، انہوں نے کہا کہ سیاست میں اداروں کی مداخلت سمیت اندرونی سیاست پر ایکدوسرے سے اختلافات ہو سکتے ہیں لیکن سرحدوں پر پیدا شدہ نازک صورتحال پر ہم سب ایک پیج پر ہیں،ایمل خان نے مزید کہا کہ باچا خان نے ہمیشہ جنگ کو مسائل کے حل کی بجائے اس کی بنیادی وجہ بتائی ہے،جبکہ دوسری جنگ عظیم میں خود باچا خان کننگھم اور کانگریس کے درمیان امن کی علامت کے طور پر کھڑے ہوئے ، ایمل خان نے واضح کیا کہ آج اسی کردار کو زندہ رکھنے کی ضرورت ہے اور چاہئے کہ ہم پاکستان اور بھارت کو جنگ کی بجائے امن مذاکرات پر آمادہ کر سکیں ،پاکستان اور بھارت کی سیاسی قیادت اور عوام سے بھی ہماری اپیل ہو گی وہ جنگ کے بیانیہ کا ساتھ دینے کی بجائے خطے میں امن اور سلامتی کیلئے اپنا کردار ادا کریں ۔