پشاور(پ ر)پختون سٹوڈنٹس فیڈریشن کے مرکزی چیئرمین حق نواز خٹک نے کہا ہے کہ پولیس اور حکومت زرعی یونیورسٹی کے جنرل سیکرٹری اچک خان اچکزئی پر حملے کے ملزمان کی پشت پناہی کر رہی ہے اور ہمارے صبر کا امتحان لیا جا رہا ہے مگر عدم تشدد کے نظریے کو ہماری کمزوری نہ سمجھا جائے۔ انہوں نے کہا کہ پولیس اور حکومت ملزمان کی پشت پناہی چھوڑ کر اچک خان اچکزئی پرحملہ کرنے والے ملزمان کو جلد از جلد گرفتار کرکے انہیں سخت سے سخت سزا دی جائے تاکہ آئندہ تعلیمی اداروں میں ایسے واقعات کی روک تھام کی جا سکے۔حق نواز خٹک نے کہا کہ ہفتہ گزر جانے کے باوجود ابھی تک کوئی گرفتاری عمل میں نہیں لائی جاسکی جس سے واضح ہوتا ہے کہ پولیس اس کیس میں دلچسپی نہیں رکھتی اور حکومتی دبائو کے پیش نظر پولیس ملزمان پر ہاتھ نہیں ڈال رہی انہوں نے کہا کہ اگر یہی رویہ رہا تو اس ملک میں جنگل کا قانون بن جائے گا اور لوگ خود اپنا بدلہ لینے پر مجبور ہونگے جس کی تمام تر ذمہ داری حکومت اور سیکورٹی اداروں پر ہوگی’ پی ایس ایف کے مرکزی چیئرمین نے مزیدکہا کہ اگر پی ٹی آئی حکومت اقتدار کے نشے میں مست اپنے ملزمان کارکنوں کی پشت پناہی سے باز نہیں آئی تو مجبورا پختون ایس ایف راست اقدام اٹھانے پر مجبور ہوگی