پشاور (پ ر) عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی ترجمان صدرالدین مروت نے گنڈی خانخیل لکی مروت میں چارسالہ بچے اویس گل کے اغوا اور قتل کے دلسوز واقعے پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ واقعے کی ذمہ داری صوبائی حکومت پر عائد ہوتی ہے، انہوں نے کہا کہ عرصہ ایک ماہ سے گنڈی خانخیل کے عوام نے اویس گل کی برامدگی کیلئے بار بار احتجاج کیا مگر ہر بار انتظامیہ نے جھوٹی تسلیاں دے کر انہیں منتشر کر دیا، جبکہ بعد میں خاموشی اختیار کر لی گئی جس کا نتیجہ یہ نکلا کہ ایک ماہ بعد اویس گل کی بوری بند لاش رات کی تاریکی میں اس کے گھر کے سامنے پھینک دی گئی لیکن انتظامیہ کو خبر نہ ہوئی۔صدرالدین مروت نے کہا کہ اگر حکومت سنجیدگی سے بروقت اقدامات کرتی تو معصوم بچے کی جان بچائی جا سکتی تھی مگر لگتا ہے کہ ملزمان کی پشت پر با اثر لوگ کا ہاتھ ہے اسی لئے حکومت کی لا پرواہی کا فائدہ اٹھاتے ہوئے ملزمان نے بچے کو قتل کردیا جس کی ساری ذمہ داری مقامی پولیس، ضلعی انتظامیہ اور صوبائی حکومت پر عائد ہوتی ہے۔صدرالدین مروت نے مطالبہ کیا کہ اس واقعے کی جوڈیشل انکوائری کرواکر ملزمان کو قرارواقعی سزا دی جائے اور غفلت برتنے والے انتظامیہ اور پولیس کے ذمہ داروں کے خلاف محکمانہ کارروائی عمل میں لائی جائے۔