2019 August سلیکٹڈ حکمرانوں نے سیاست کو ذاتی مفادوعناد کے لئے استعمال کیا،امیر حیدر خان ہوتی

سلیکٹڈ حکمرانوں نے سیاست کو ذاتی مفادوعناد کے لئے استعمال کیا،امیر حیدر خان ہوتی

سلیکٹڈ حکمرانوں نے سیاست کو ذاتی مفادوعناد کے لئے استعمال کیا،امیر حیدر خان ہوتی

پشاور(پ ر) عوامی نیشنل پارٹی کے مرکزی سینئر نائب صدر امیر حیدر خان ہوتی نے کہا ہے کہ ملک کے حالات تیزی سے خراب ہوتے جا رہے ہیں اور یہ انارکی کی طرف بڑھ رہا ہے، عوام انصاف حاصل کرنے کی کوشش کر رہے ہیں،تاہم ملک میں انصاف نام کی کوئی چیز نظر نہیں آ رہی، اپنے ایک بیان میں انہوں نے کہا کہ حکمرانوں کی غلط اور غیر سنجیدہ پالیسیوں کے باعث ملکی حالات تیزی سے انتشار کی جانب بڑھ رہے ہیں،عام آدمی کی ضروریات زندگی کی قیمتوں میں اضافہ روز کا معمول ہے جس نے نہ صرف صنعتوں کے لئے مشکلات پیدا کی ہیں بلکہ اس سے بے روزگاری میں بھی اضافہ ہوا ہے۔ حکومت اور ریاست کے تمام ستونوں کو مل کر اس مشکل صورتحال کا مقابلہ کرنا چاہئے،صوبائی حقوق اور پارلیمان کی بالادستی قبول نہ کرنے والی قوتوں سے مسائل مزید بڑھ گئے، امیر حیدر خان ہوتی نے کہا کہ موجودہ سلیکٹڈ حکمرانوں نے سیاست کو اپنے ذاتی مفاد، اور عناد کے لئے استعمال کیا ہے، جب سیاست پر اس کی روح کے مطابق عمل نہ کیا جائے اور مصنوعی ترقی کے ذریعے قوم کو دھوکہ دیا جائے تو پھر اس کے نتیجے میں ملک میں انارکی بڑھتی ہے اور ملکی حالات بتدریج تباہی کی جانب گامزن ہوتے ہیں، یہی سب کچھ آج پاکستان میں بھی دکھائی دے رہا ہے۔انہوں نے کہا کہ تبدیلی کے نام پر پاکستان میں ترقی کاغذوں میں تو بہت ہوئی جبکہ حقیقت اس کے برعکس ہے۔ صرف برعکس ہی نہیں ہے، بلکہ اس حد تک خطرناک ہے کہ جس کا من حیث القوم تصور بھی نہیں کیا جاسکتا، انہوں نے کہا کہ حکومت عوامی مینڈیٹ سے منتخب نہیں ہوئی بلکہ اسے عوام کے اوپر ہونے والے معاشی جبرکو جاری رکھنے کے لئے ’سلیکٹ‘ کیا گیا ہے، مگر اب عام شہریوں پر بھی یہ واضح ہو چکا ہے کہ ’تبدیلی‘ کے جھانسے میں انہیں پرانی پالیسیوں کی چکی میں ہی پیسا جا رہا ہے۔

تبصرہ کیجئے
شیئر کریں