2019 August اے این پی کا بی آر ٹی کے خلاف عدالت جانے کا عندیہ

اے این پی کا بی آر ٹی کے خلاف عدالت جانے کا عندیہ

اے این پی کا بی آر ٹی کے خلاف عدالت جانے کا عندیہ

پشاور (جنرل رپورٹر) عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی صدر ایمل ولی خان نے عندیہ دیا ہے کہ وہ بہت جلد پشاور کے واحد بڑے منصوبے بس ریپڈ ٹرانزٹ میں تاخیر، لاگت زیادتی اور ناقص منصوبہ بندی کے خلاف عدالت جائیں گے۔ سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئیٹر پر جاری پیغام میں ایمل ولی خان نے کہا کہ بی آر ٹی پشاور کرپشن اور نااہلی کی ایک ایسی داستان بن چکی ہے جس کی شاید ہی کوئی مثال موجود ہو۔ ایمل ولی خان نے کہا کہ وہ ہمیشہ کہتے چلے آرہے ہیں کہ بی آر ٹی پشاور منصوبہ نااہلیت کا اعلیٰ نمونہ ہے۔ لاگت بڑھتی چلی جا رہی ہے جبکہ تکمیل کے آثار نظر نہیں آ رہے۔ انہوں نے کہا کہ بی آر ٹی منصوبہ کرپشن کی ایک الگ داستان ہے جسے چھپانے کے لئے اب صوبائی حکومت اور منصوبے کے حکام میڈیا ورکرز کو بھی نشانہ بنارہے ہیں۔ تبدیلی سرکار کو آئینہ دکھانے والے صحافیوں پر تشدد نہ صرف قابل مذمت ہے بلکہ ان تمام افراد کے خلاف سخت کارروائی کی جائے جو صحافیوں کو اپنے پیشہ وارانہ فرائض سے روکنے کی کوشش کررہے ہیں۔ جمہوری ملک میں میڈیا کی آزادی ہوتی ہے لیکن موجودہ حکومت میڈیا سمیت ہر ادارے کا گلا گھونٹنے پر تلی ہوئی ہے۔ نیب پر تنقید کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ایک سیاسی رہنما کے ناشتے کے بل تو انہیں نظر آتے ہیں لیکن بی آر ٹی میں کی گئی کروڑوں کی کرپشن پر چپ سادھ لی ہے۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ وہ اپنے قانونی ماہرین سے جلد ہی اس بارے ملاقات کریں گے اور صوبائی حکومت کے خلاف عدالت کا رخ کریں گے۔انہوں نے کہا کہ بی آر ٹی سفید ہاتھی بن چکا ہے جس میں کی گئی کرپشن کسی کو نظر نہیں آرہی۔

شیئر کریں