پشاور ( پ ر ) عوامی نیشنل پارٹی کے پارلیمانی بورڈ کے چیئرمین و صوبائی صدر ایمل ولی خان نے کہا ہے کہ تمام سیاسی جماعتوں کو قومی اسمبلی میں پیش کئے جانے والے بل کو بلاتاخیر پاس کرانا چاہئے تاکہ الیکشن میں تاخیر نہ ہو سکے، ان خیالات کا اظہار انہوں نے باچا خان مرکز میں پارٹی کے پارلیمانی بورڈ کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا، اس موقع پر سیکرٹری پارلیمانی بورڈ سردار حسین بابک، ممبران خورشید خٹک، مٹیار خان ایڈوکیٹ اور شاہ نصیر خان بھی موجود تھے، اجلاس میں فاٹا انتخابات کے حوالے سے اہم امور زیر غور آئے اور اب تک موصول ہونے والی درخواستوں کا جائزہ لیا گیا، ایمل ولی خان نے اجلاس سے اپنے خطاب میں قومی اسمبلی میں پیش کئے گئے بل بارے کہا کہ اے این پی پہلے سے ہی مطالبہ کرتی آ رہی ہے کہ قبائلی اضلاع کے انتخابات کیلئے نشستوں کی تعداد میں اضافہ کیا جانا چاہئے، انہوں نے کہا کہ اب ایک ایسے موقع پر جب شیڈول کا اعلان بھی ہو چکا ہے بل پیش کردیا گیا ہے تاہم اب تمام سیاسی جماعتوں کی ذمہ داری بنتی ہے کہ وہ اس بل کو بلاتاخیر پاس کرائیں،انہوں نے کہا کہ قبائلی علاقوں میں دہشت گردی کے باعث املاک تباہ ہو چکی ہیں جن کی دوبارہ آباد کاری انتہائی ضروری ہے، اور اس مقصد کیلئے اسمبلی میں قبائلی علاقوں کی نمائندگی نا گزیر ہے، انہوں نے کہا کہ صوبے کا تین فیصد قبائلی عوام کی ترقی پر خرچ کرنے کیلئے جامع اقدامات کی ضرورت ہے تاکہ وہاں روزگار کے مواقع ، تعلیمی ماحول، صحت کے مواقع پیدا کئے جاسکیں، انہوں نے کہا کہ اے این پی الیکشن میں حصہ لینے کیلئے تیار ہے ، اوریہ بات انتہائی حوصلہ افزا ہے کہ قبائلی انتخابات میں حصہ لینے کیلئے نوجوان امیدوار میدان میں آئے ہیں۔