پشاور(پ ر)عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی جنرل سیکرٹری و ڈپٹی اپوزیشن لیڈر سردار حسین بابک نے کہا ہے کہ جمہوری اداروں کی مضبوطی کیلئے سیاسی جماعتوں کا مضبوط اور منظم ہونا ضروری ہے۔ دہشت گردی کی جنگ میں سب سے زیادہ نقصان اے این پی ہی کو اٹھانا پڑا لیکن امن کی خاطر اب بھی اپنے اصولی موقف و بیانیے پر قائم ہیں۔ پشاور کے مقامی ہوٹل میں غیر سرکاری تنظیم کے زیر اہتمام سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ سیاسی جماعتوں کو انتہائی منظم طریقے سے جمہوریت کیلئے کام کرنا چاہیئے۔ اے این پی ایک منظم اور اصولی جماعت ہے اور یہی وجہ ہے کہ پارٹی کی مقبولیت میں روز بروز اضافہ ہورہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ایک عرصے سے جانی و مالی مصائب اور نقصانات کے باوجود پارٹی آگے جارہی ہے، دہشت گردی کی جنگ میں اے این پی کو سب سے زیادہ نقصان اٹھانا پڑا ہے لیکن امن کی خاطر اپنی اصولی بیانیے پر قائم رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ اے این پی کے فیصلے آئینی ادارے کرتے ہیں اور یہ آئینی ادارے عوام کے منتخب کردہ ہوتے ہیں۔ یہ اعزاز اے این پی ہی کو حاصل ہے کہ چار سال کے بعد نئی ممبر سازی اور تنظیم سازی جمہوری طریقے سے کرتی ہے۔ پارٹی کے تمام فیصلے مشاورت سے ہوتے ہیں،پارٹی کوچلانے اور متحرک رکھنے اورپارٹی کا بیانیہ عوام تک پہنچانے کیلئے تمام طریقے اپنائے جارہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اے این پی اپنی اصول پسندی اور جمہوریت پسندی کی وجہ سے پاکستان کی سیاست میں ایک کلیدی اور ممتاز حیثیت رکھنے والی جماعت ہے۔ وقت نے ثابت کردیا ہے کہ ہمارے بزرگوں کے ملک و قوم کے فروغ اور ترقی کیلئے تمام تر پالیساں صحیح ثابت ہوئی۔یہی وجہ ہے کہ آج ملک کے تمام ذمہ داران اس کا برملا اعتراف کرتے اور ان کی تقلید کرتے ہیں۔