پشاور ( پ ر ) عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی صدر ایمل ولی خان نے شمالی وزیرستان میں سیکورٹی اہلکاروں کے قافلے پر حملے کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے شہید اہلکاروں کی مغفرت و زخمیوں کی جلد صحت یابی کیلئے دعا کی ہے، اپنے ایک مذمتی بیان میں انہوں نے کہا کہ بار بار نشاندہی کے باوجود حالات کی سنگینی کو سنجیدہ نہیں لیا جا رہا ، حالات بد سے بد تر ہوتے جا رہے ہیں ،سیکورٹی اہلکاروں پر حملے معمول بن چکے ہیں جس کی وجہ سے اہلکاروں کا مورال بدستور گر رہا ہے،انہوں نے کہا کہ حکومتوں کی غیر سنجیدگی و غفلت کے باعث دہشت گردوں کو سافٹ ٹارگٹ تلاش کرنے میں کوئی دشواری پیش نہیں آتی اور وہ جب جہاں چاہیں کارروائی کر بیٹھتے ہیں،ایمل ولی خان نے کہا کہ حکومتی وزراءمخالفین کو گالیاں دینے ،الزامات لگانے اور اپنی صفائیاں پیش کرنے میں مصروف ہیں جبکہ صوبے اور عوام کو دہشت گردوں کے رحم و کرم پر چھوڑ دیا گیا ہے، انہوںنے کہا کہ موجودہ حکومت صوبے کی تاریخ کی ناکام ترین حکومت ہے اور اپنی تمام ذمہ داریوں سے غافل ہے،انہوں نے کہا کہ مسلسل بدامنی کی واقعات سے عوام کاجینا محال ہوچکا ہے جبکہ سیکورٹی اہلکاروں کا مورال دن بدن گرتا جا رہا ہے، ایمل خان نے کہا کہ دہشت گرد سیکورٹی اہلکاروں کو اپنی راہ کی سب سے بڑی رکاوٹ سمجھتے ہیں جس کے باعث ان پر حملوں میں اضافہ ہو رہا ہے، انہوں نے کہا کہ حکومت کی بے حسی اور بے بسی سے امن دشمن کی جڑیں مضبوط اورروزمرہ کی زندگی مفلوج ہورہی ہے، قوم میں بے چینی اور اضطراب ہے، ترقی کا خواب قیام امن کے بغیر ادھورا ہے،انہوں نے تمام شہید اہلکاروں کے ورثا سے ہمادردی کا اظہار کیا اور شہداءکی مغفرت کے ساتھ زخمیوں کی جلد صحت یابی کی دعا بھی کی ، ایمل ولی خان نے مطالبہ کیا کہ زخمیوں کو بہترین طبی سہولیات کی فراہمی یقینی بنائی جائے۔