پشاور (پ ر) اپوزیشن جماعتوں کی کوآ رڈیشن کمیٹی نے25جولائی کو پشاور میں یوم سیاہ اور عظیم الشان احتجاجی مظاہرے کی تیاریوں کو حتمی شکل دے دی، اس سلسلے میں کمیٹی کا اجلاس باچا خان مرکز پشاور میں منعقد ہوا، اجلاس میں اے این پی کے صوبائی جنرل سیکرٹری سردار حسین بابک،مختیار خان ایڈوکیٹ، مسلم لیگ کے راشد محمود، جے یو آئی کے مولانا امان اللہ اور آصف اقبال داؤدزئی، پیپلزپارٹی کے ایوب شاہ اور قومی وطن پارٹی سے طارق خان نے شرکت کی، اجلاس میں رہبر کمیٹی کی ہدایات کی روشنی میں فیصلہ کیا گیا کہ گزشتہ سال انتخابات میں عوامی مینڈیٹ پر ڈاکہ ڈالنے کے خلاف25جولائی کویوم سیاہ منایا جائے گا جبکہ اسی روز دن گیارہ بجے موٹر وے پارک رنگ روڈ پر ایک عظیم الشان احتجاجی مظاہرہ کیا جائے گا، مظاہرے سے اپوزیشن جماعتوں کی مرکزی قیادت خطاب کرے گی، اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے سردار حسین بابک نے کہا کہ رہبر کمیٹی کی ہدایت پر یوم سیاہ اور مظاہرے کی تیاریاں مکمل ہیں، انہوں نے کہا کہ گزشتہ سال25جولائی کے انتخابات میں لاڈلے کے علاوہ پوری قوم کے مینڈیٹ پر ڈاکہ ڈالا گیا جس کا خمیازہ آج غریب عوام بھگت رہے ہیں،انہوں نے کہا کہ الیکٹڈ نمائندے عوام کے خیر خواہ ہوتے ہیں جبکہ لاڈلے کی طرح سلیکٹڈ صرف مخصوص مفادات کی خاطر کرتے ہیں، انہوں نے کہا کہ کرپشن کا بازار گرم ہے اور تمام طبقہ فکر کے لوگ چیخ رہے ہیں،ناانصافی اور اقربا پروری عروج پر ہے جس سے ملکی وبین الاقوامی سطح پر پاکستان کی بدنامی ہو رہی ہے،سردار حسین بابک نے کہا کہ حکمران اقتدار کے نسے میں مست ہیں اور انہیں بدترین حالات کا کوئی ادراک نہیں، انہوں نے کہا کہ بدقسمتی سے پارلیمنٹ اور جمہوریت کو بدنام کرنے کا کوئی موقع ہاتھ سے نہیں جانے دیا جا رہا جبکہ اظہار رائے پر مکمل پابندی ہے، انہوں نے کہا کہ جمہوریت میں ایسا ماحول نہیں ہو سکتا ملک میں عملاً مارشل لا نافذ ہے، انہوں نے کہا کہ حکومت مخالف تحریک حکومت سے چھٹکارا پانے تک جاری رہے گی۔