پشاور (پ ر) عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی جنرل سیکرٹری سردار حسین بابک نے کہا ہے کہ مسلط حکمرانوں نے نیب کے ذریعے سیاسی مخالفین کو انتقام کا نشانہ بنانے کی بدترین مثال قائم کر رکھی ہے، عوام کو سبز باغ دکھانے والے سلیکٹڈ وزیر اعظم آج خود مہنگائی کے اعلانات کر رہے ہیں،حکومت چندوں پر نہیں چل سکتی، لوگوں سے روزگار اور گھر دینے دعوے ہوا ہو چکے ہیں، ملک میں بجلی اور گیس کی قیمتیں تاریخ کی بلند ترین سطح پر آ چکی ہیں،ان خیالات کا اظہار انہوں نے باچا خان مرکز پشاور میں ایک شمولیتی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا، اس موقع پر پی کے22بونیر کے گاؤں سورا کے سابق ٹاؤن ناظم اجمل خان نے اپنے خاندان اور ساتھیوں سمیت اے این پی میں شمولیت کا اعلان کیا، شمولیت کی باضابطہ تقریب بروز اتوار 18اگست سہ پہر4بجے گاؤں سورا پ حجرہ امو خیل بونیر میں ہو گی جس کے مہمان خصوصی اے این پی کے صوبائی جنرل سیکرٹری سردار حسین بابک ہونگے۔سردار حسین بابک نے پارٹی میں شامل ہونے والے مہمانوں کو سرخ ٹوپیاں پہنائیں اور انہیں مبارکباد پیش کرتے ہوئے کہا کہ عمران کی موجودگی میں ملک کی معیشت بہتر نہیں ہو سکتی کیونکہ وہ خود بہتر معاشی پالیسیوں کی راہ میں رکاوٹ ہیں،مسلط وزیر اعظم اب ملک کیلئے سیکورٹی رسک بن چکے ہیں حکومت چند ماہ مزید اقتدار میں رہی تو ملک دیوالیہ ہو جائے گا۔
سردار حسین بابک نے کہا کہ صوبے کے قیمتی وسائل اور ذرائع آمدن لوٹ لئے گئے ہیں اور ترقیاتی منصوبوں کا نام و نشان تک نہیں، انہوں نے کہا کہ احتسابی ادارے گزشتہ6سال سے صوبے پر قابض حکمرانوں کے خلاف تحقیقات کرے اور وسائل کی بے دردی سے کی گئی لوٹ مار کا حساب لے،انہوں نے کہا کہ عوام کا اعتماد اے این پی پر ہے اور موجودہ نازک صورتحال میں عوام کی نظریں اے این پی پر ہیں، انہوں نے کہا کہ اجمل خان کی شمولیت پارٹی کیلئے نیک شگون ہے۔